افغانستان کا افغان امن عمل میں کردار ادا کرنے پر پاکستانی قیادت کا شکریہ

Share this story

قومی مفاہمت کے بارے میں افغانستان کی اعلی کونسل کے چیئرمین ڈاکٹر عبداللہ عبداللہ نے افغان امن عمل کو منطقی انجام تک پہنچانے کیلئے پاکستان کی مفاہمتی اور سنجیدہ کوششوں کی تعریف کی ہے۔

انہوں نے یہ بات پیر کے روز اسلام آباد میں وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی سے ملاقات میں کہی۔

ڈاکٹر عبداللہ عبداللہ نے افغان امن عمل میں کردار ادا کرنے پر پاکستانی قیادت کا شکریہ ادا کیا۔

شاہ محمود قریشی نے کہا کہ پاکستان افغانوں کی طرف سے ان کی سرپرستی میں شروع کردہ امن عمل کے ذریعے افغانستان کے تنازع کے پرامن اور پائیدار سیاسی حل کی حمایت کرتا ہے۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان نے مشترکہ ذمہ داری کے طورپر افغان امن عمل میں سہولت کار کا کردار ادا کیاہے۔

شاہ محمود قریشی نے کہا کہ امریکہ طالبان امن معاہدہ اور بعد میں دوحہ میں افغان دھڑوں کے درمیان ہونے والے مذاکرات سے افغانستان میں پائیدار امن کے امکانات پیدا ہوئے ہیں۔

انہوں نے کہاکہ افغان قیادت کو اس تاریخی موقع سے فائدہ اٹھانا اور افغان امن عمل کو منطقی انجام تک پہنچانے کیلئے سنجیدہ کوششیں کرنی چاہئیں۔

انہوں نے کہا کہ ہمیں حالات خراب کرنے والوں پر بھی نظر رکھنا ہوگی جو خطے میں امن اور استحکام نہیں چاہتے۔

وزیر خارجہ نے کہاکہ عالمی برادری کو افغانستان کی تعمیر نو اور اقتصادی استحکام کیلئے آگے بڑھنا ہوگا۔

شاہ محمود قریشی نے کہاکہ پاکستان لاکھوں افغان مہاجرین کی اپنے ملک باعزت واپسی کا خواہاں ہے۔

دریں اثنا وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ افغان امن عمل میں پاکستان کے کردار کو پوری دنیا نے تسلیم کیا اور اسے سراہا ہے۔

انہوں نے یہ بات اسلام آباد میں افغانستان کی قومی مصالحت کے لئے اعلیٰ کونسل کے چیئرمین ڈاکٹر عبداللہ عبداللہ سے ملاقات کے بعد صحافیوں کو بریفنگ دیتے ہوئے کہی۔

وزیرخارجہ نے کہا کہ پاکستان افغانستان کے ساتھ تعلقات کا نیا آغاز چاہتا ہے تاکہ دوطرفہ تجارت اور علاقائی روابط کو فروغ دیا جاسکے۔

انہوں نے کہا کہ مشیر تجارت عبدالرزاق دائود جلد افغانستان کا دورہ کریں گے۔

شاہ محمود قریشی نے کہا کہ افغانستان میں خوشحالی اور استحکام پاکستان کے قومی مفاد میں ہے۔

Share this story

Leave a Reply