امریکہ رواں سال نومبرتک افغانستان سے اپنے ساڑھے چار ہزار فوجی کم کردے گا:مکینزی

Share this story

ویب ڈیسک: امریکی سنٹرل کمان کے کمانڈر Kenneth Mckenzieنے کہاہے کہ امریکہ رواں سال نومبرتک افغانستان سے اپنے ساڑھے چارہزارفوجی کم کردے گا۔

اس سے پہلے امریکی محکمہ دفاع نے کہاتھا کہ امریکہ طالبان کے ساتھ طے شدہ معاہدے کی شرط کے مطابق آٹھ ہزارفوجی افغانستان میں رکھے گا۔

معاہدے کے مطابق اگرطالبان دہشت گردوں کے ساتھ تعلقات سمیت معاہدے کی شرائط پر پورا اترتے ہیں توامریکہ مئی دوہزاراکیس تک افغانستان سے اپنی مکمل فوج نکال لے گا۔

جوں جوں صدارتی انتخابات کا وقت نزدیک آ رہا ہے ، صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے فوجیوں کو وطن واپس لانے اور اپنے ملک کو “لامتناہی جنگوں” سے نکالنے کے لئے اپنی انتخابی مہم کے وعدے کو پورا کرنے کی کوششوں کو دوگنا کردیا۔

گذشتہ ماہ عراقی وزیر اعظم مصطفیٰ الکدھیمی سے ملاقات کے دوران، ٹرمپ نے عراق سے فوجیوں کے انخلا کے اپنے ارادے کا اعادہ کیا۔

ٹرمپ نے افغانستان سے بھی مکمل انخلا کا فیصلہ کیا ہے۔ افغانستان کی جنگ، جس میں تقریبا 2،400 امریکی فوجیوں کی ہلاکتیں ہوئی ہیں، امریکی تاریخ کی طویل ترین جنگ ہے۔

Share this story

Leave a Reply