جعلی لائسنسوں کی بازگشت، یورپین یونین کے بعد برطانیہ نے بھی پی آئی اے کی پروازیں معطل کر دیں

Share this story

لندن: یورپین یونین ایوی ایشن سیفٹی ایجنسی کے بعد برطانوی سول ایوی ایشن اتھارٹی نے بھی پی آئی اے کی پروازیں معطل کر دیں۔

ترجمان سی اے اے برطانیہ کے مطابق یورپین یونین ایوی ایشن سیفٹی ایجنسی کے فیصلے کے تناظر میں پروازیں معطل کر رہے ہیں۔

ترجمان کا کہنا ہے کہ برمنگھم، لندن اور مانچسٹر سے پی آئی اے کی پروازیں معطل کی جا رہی ہیں، قانون کے مطابق ای اے ایس اے کے فیصلے کے بعد پروازیں معطل کرنے کے پابند ہیں۔

برطانوی سول ایوی ایشن اتھارٹی کی جانب سے پروازیں معطل کرنے کے فیصلے پر لندن میں پی آئی اے کے اسٹیشن مینیجر نے تبصرہ کرنے سے گریز کیا ہے۔

واضح رہے کہ یورپین یونین ایئر سیفٹی ایجنسی نے پاکستان انٹرنیشنل ایئر لائن کا یورپی ممالک کےلیے فضائی آپریشن کا اجازت نامہ آئندہ چھ ماہ کےلیے معطل کردیا

معطلی کا اطلاق یکم جولائی 2020 رات 12 بجے یو ٹی سی ٹائم کے مطابق ہوگا جس کے بعد قومی ایئر لائن کی یورپ کےلیے تمام پروازیں عارضی طور پر منسوخ ہوجائیں گی۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ جن مسافروں نے پی آئی اے کے ذریعے یورپی ممالک کےلیے بکنگ کرائی ہوئی تھی انہیں پریشان ہونے کی ضرورت نہیں ہے کیونکہ وہ چاہیئں تو ریفنڈ لے سکتے ہیں یا بکنگ آگے کراسکتے ہیں۔

دوسری جانب ملک بھر میں جاری محدود اندرون ملک فضائی آپریشن کی اجازت میں سول ایوی ایشن اتھارٹی نے مزید ایک ماہ کی توسیع کر دی ہے۔

جاری کردہ نوٹم کے مطابق اندرون ملک پروازیں چلانے کی اجازت میں 31 اگست تک کر دی گئی ہے۔ لاہور، کراچی، اسلام آباد، پشاور اور کوئٹہ میں اندرون ملک پروازوں کی اجازت ہوگی۔

گلگت اور سکردو ائیرپورٹ پر صرف اسلام آباد سے پروازیں چلانے کی اجازت دی گئی ہے۔ ملک کے دیگر تمام ائیرپورٹس پر اندرون ملک پروازوں پر ممانعت ہوگی۔

خیال رہے کہ سی اے اے نے کورونا وائرس کے پیش نظر تیس جون تک ملک بھر کے چھ ایئرپورٹس پر اندرون ملک پروازوں کی محدود اجازت دی تھی۔

Share this story

Leave a Reply