حکومت نیا پاکستان ہاؤسنگ پروگرام کیلئے30ارب روپے کی سبسڈی دے گی،وزیراعظم

Share this story

کنسٹرکشن میں پیسہ لگانے والوں سے ذرائع آمدن نہیں پوچھا جائیگا:وزیراعظم کا اعلان

حکومت نے نیا پاکستان ہاؤسنگ پروگرام کے لئے تیس ارب روپے کی سبسڈی دینے کا فیصلہ کیا ہے۔

اس بات کا اعلان وزیراعظم عمران خان نے جمعہ کے روز اسلام آباد میں ہاؤسنگ ،تعمیرات اور ترقی کے بارے میں قومی رابطہ کمیٹی کے پہلے اجلاس کے بعد براہ راست نشریات میں کیا۔

وزیراعظم نے کہا کہ حکومت نیا پاکستان ہاؤسنگ پروگرام کے تحت پہلے مرحلے میں پہلے ایک لاکھ مکانات تعمیر کریگی اور ہر مکان پر تین لاکھ روپے اعانت فراہم کرے گی۔

وزیراعظم نے کہا کہ حکومت نے تعمیراتی شعبے پر توجہ مرکوز کررکھی ہے کیونکہ صرف یہ شعبہ ملک میں روزگار کے وسیع ترین مواقع فراہم کرنے کی صلاحیت رکھتا ہے ۔

انہوں نے کہا کہ کوروناوباء کے باعث عالمی معیشتیں سکٹر رہی ہیں اور صرف تعمیراتی شعبہ معاشی سرگرمیاں تیز کرسکتا ہے۔

وزیراعظم نے کہا کہ بین الاقوامی تقاضوں کے تحت ہم اس سال اکتیس دسمبر تک تعمیراتی شعبے کو ریلیف فراہم کرسکتے ہیں۔

انہوں نے سرمایہ کاروں پر زور دیا کہ وہ اس محدود وقت کے موقع سے استفادہ کریں کیونکہ سرمایہ کاروں سے ان کے ذرائع آمدن کے بارے میں نہیں پوچھا جائیگا۔

وزیراعظم نے کہا کہ این او سی کی تعداد اور مکان کی تعمیر پر ٹیکسوں میں کمی کے علاوہ منظوری کیلئے وقت مقرر کرکے عمل کو آسان بنایا گیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ عوام کو نیا پاکستان ہائوسنگ پروگرام کے تحت پانچ مرلہ مکان کی تعمیر کیلئے قرض پر صرف پانچ فیصد شرح منافع جبکہ دس مرلہ مکان کی تعمیر کیلئے شرح سات فیصد ہوگی۔

وزیراعظم نے کہا کہ سٹیٹ بنک نے بنکوں کو ہدایت کی ہے کہ وہ اپنے مجموعی قرضوں کا پانچ فیصد تعمیراتی شعبے کے لئے مختص کریں اور اس منصوبے کے تحت اس مقصد کیلئے تین سو تیس ارب روپے دستیاب ہونگے۔

Share this story

Leave a Reply