سی پیک کے متعلق منفی بھارتی پروپیگنڈہ سختی سے مسترد

Share this story

ویب ڈیسک – پاکستان نے چین پاکستان اقتصادی راہداری کے بارے میں بھارت کے مذموم پروپیگنڈے کو یکسر مسترد کرتے ہوئے اسے عالمی برادری کو گمراہ کرنے کی بھارت کی ناکام کوششوں کا ایک اور ثبوت قرار دیا ہے۔

آج ایک بیان میں دفترخارجہ کے ترجمان زاہد حفیظ چودھری نے چین پاکستان وزرائے خارجہ کے سٹرٹیجک مذاکرات کے دوسرے مرحلے کے مشترکہ بیان کے حوالے سے بھارت کی خارجہ امور کی وزارت کے ترجمان کے بلاجواز اور غیر ذمہ دارانہ بیان کو مسترد کردیا۔

انہوں نے کہا کہ بھارتی ترجمان کا بیان جس میں انہوں نے جموں وکشمیر کو بھارت کا نام نہاد اٹوٹ انگ اور بھارت کا اندرونی معاملہ قرار دیا ایک مضحکہ خیز فرضی کہانی، تاریخی اور قانونی حقائق کے منافی اور اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کی متعلقہ قراردادوں کی خلاف ورزی ہے۔

زاہد حفیظ چودھری نے کہا کہ بھارت کے جموں وکشمیر اور اسکے ان حصوں جو بھارت کے غیر قانونی زیر قبضہ ہیں کے بارے میں اپنے مفادات پر مبنی بیانات بالکل بے بنیاد ہیں۔

انہوں نے کہا کہ اس معاملے پر بھارت کا کوئی تاریخی، قانونی اور اخلاقی جواز نہیں ہے۔

ترجمان نے کہا کہ بھارت جھوٹے دعووں کی تکرار سے حقائق کو تبدیل نہیں کرسکتا اور نہ ہی دنیا کی توجہ اپنے غیر قانونی زیر تسلط جموں وکشمیر میں ریاستی دہشتگردی اور کشمیری عوام کے انسانی حقوق کی سنگین پامالیوں سے ہٹا سکتا ہے۔

انہوں نے کہا کہ بھارت کو جھوٹے اور گمراہ کن بیانات کی بجائے اپنی بین الاقوامی ذمہ داریاں ایمانداری سے پورا کرنی چاہیں۔

ترجمان نے کہا کہ بھارت کو فوری طور پر جموں وکشمیر پر اپنا غیر قانونی اور جبری قبضہ ختم کرنا چاہیے اور کشمیریوں کو اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کی متعلقہ قراردادوں کے تحت منصفانہ اور غیر جانبدرانہ استصواب رائے کے ذریعے اپنا حق خودارادیت دینا چاہیے۔

Share this story

Leave a Reply