‘عراق نے امریکی افواج کی بیدخلی کا کہا تو اسے بھاری قیمت چکانا ہوگی’

Share this story

امریکہ کے صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے عراق کو خبر دار کیا ہے کہ اگر امریکی فوجیوں کو ملک سے نکلنے کا کہا گیا تو بغداد پر ایسی پابندیاں عائد کی جائیں گی جس کا اس نے پہلے کبھی سامنا نہ کیا ہو گا۔

عراقی پارلیمنٹ نے اتوار کو ایک قرار داد منظور کی ہے جس میں غیر ملکی افواج سے کہا گیا ہے کہ وہ ملک سے نکل جائیں۔

یہ پیش رفت ایسے موقع پر سامنے آئی ہے جب امریکہ نے جمعے کو بغداد کے ہوائی اڈے کے قریب فضائی حملے میں ایران کے اہم فوجی کمانڈر قاسم سلیمانی کو نشانہ بنایا تھا۔

قاسم سلیمانی کی ہلاکت کے خلاف عراق میں امریکی مخالف مظاہروں کا سلسلہ جاری ہے۔

فلوریڈا میں تعطیلات گزارنے کے بعد واشنگٹن روانگی سے قبل صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے صدر ٹرمپ نے کہا کہ اگر امریکی فوجیوں کو عراق کی سرزمین چھوڑنے کی ضرورت پیش آئی تو عراقی حکومت کو وہاں موجود ایئر بیس کی بہت بھاری قیمت ادا کرنا ہو گی۔

انہوں نے کہا کہ اگر عراق نے غیر دوستانہ بنیاد پر امریکہ کو ملک چھوڑنے کا کہا تو ہم ان پر ایسی پابندیاں عائد کریں گے جو پہلے کبھی نہیں کی گئی تھیں۔

ان کے بقول، عراق پر عائد کی جانے والی پابندیاں اسی طرز کی ہوں گی جس کا سامنا ایران کو کرنا پڑا تھا۔

یاد رہے کہ عراق میں امریکی ایئر بیس موجود ہے جب کہ پانچ ہزار فوجی عراق کی فورسز کو تربیت دینے کے لیے وہاں موجود ہیں۔

Share this story

Leave a Reply