فرانسیسی صدر نےدہشت گردوں کے بجائے اسلام پرحملہ کرکے اسلامو فوبیا کی حوصلہ افزائی کی، وزیراعظم

Share this story

وزیر اعظم عمران خان نے افسوس کا اظہار کیا ہے کہ بدقسمتی سے فرانسیسی صدر نے دہشت گردوں کے  بجائے اسلام پر حملہ کرکے اسلامو فوبیا کی حوصلہ افزائی کرنے کا انتخاب کیا ہے۔

آج ایک ٹویٹ میں ، انہوں نے کہا کہ قائد کی پہچان انسانوں کو متحد کرنا ہے ، جیسا کہ نیلسن منڈیلا نے تقسیم کرنے کی بجائے کیا۔

وزیراعظم نے کہاہے کہ یہ وقت ہے جب صدر میکرون دوریاں بڑھانے اور ایک خاص گروہ کودیوار سے لگانے جس سے بنیادپرستی کوسازگارماحول میسر آتا ہے کی بجائے ان کے زخموں پر مرہم رکھتے اور شدت پسندوں کو جگہ دینے سے انکار کرے۔

وزیراعظم نے کہاکہ بدقسمتی سے میکرون نے دہشت گردوں کی بجائے اسلام پر تنقید کرکے اسلام فوبیا کی حوصلہ افزائی کی ہے۔ مقام افسوس ہےکہ صدر میکرون نےجان بوجھ کرمسلمانوں کو جن میں انکےاپنےشہری بھی شامل ہیں کو مشتعل کرنےکی راہ اختیارکی اور اسلام اور رسول اکرم صل اللہ علیہ وسلم کیخلاف توہین آمیز خاکوں کی نمائش کی حوصلہ افزائی کی۔ اسلام پر اپنے بلا سوچے سمجھے حملے سے صدر میکرون یورپ اور دنیا بھر کے کروڑوں مسلمانوں کے جذبات پر حملہ آور ہوئے ہیں اور انہیں مجروح کرنے کا سبب بنے ہیں۔

انہوں نے کہاکہ یہ دہشت گرد ہیں جو معاشرے میں تشددپیدا کرتے ہیں چاہے وہ مسلمان ہوں گورے انتہاپسند یا نازی نظریہ رکھنے والے انہوں نے کہاکہ لاعلمی پر مبنی عوامی بیانات مزید نفرت اسلام فوبیا اور شدت پسندی کو ہوا دینے کی وجہ بنیں گے۔

Share this story

Leave a Reply