ملک میں آج یوم دفاع وشہدا منایا جارہاہے

Share this story

ملک میں آج (اتوار) یوم دفاع وشہدا منایا جارہاہے جس کا مقصد غازیوں اور شہدا کو خراج عقیدت پیش کرنا اورتمام خطرات کے خلاف مادر وطن کے دفاع کے عزم کا اعادہ کرنا ہے ۔

1965ء میں آج کے روز بھارتی فوج نے رات کی تاریکی میں بین الاقوامی سرحد کو عبور کرتے ہوئے پاکستان پرحملہ کیا لیکن قوم نے دشمن کے گھنائونے عزائم کو ناکام بنادیا ۔

مساجد میں نماز فجر کے بعد ملک کی ترقی وخوشحالی اور مقبوضہ کشمیر کی بھارتی تسلط سے آزادی کیلئے خصوصی دعائیں مانگی گئیں۔

شہداء کیلئے فاتحہ اور قرآن خوانی بھی کی جارہی ہے۔

د ن کاآغازوفاقی دارالحکومت میں اکتیس اورصوبائی دارالحکومتوں میں اکیس توپوں کی سلامی سے ہوا۔

ایوان صدرمیں ہونے والی پُروقارتقریب میں صدرڈاکٹرعارف علوی مسلح افواج کے افسروں اور جوانوں کوملک وقوم کے لئے ان کی شاندارخدمات کے اعتراف میں فوجی اعزازات دیں گے۔

یوم دفاع پاکستان کے سلسلے میں تمام کنٹونمنٹس کے ساتھ مختلف شہروں میں پروقار تقاریب کا اہتمام کیا جائے گا ۔

اے پی پی کے مطابق 6ستمبر65کے شہداء اور ہیروز کو خراج عقیدت پیش کرنے کیلئے ’’یوم دفاع و شہداء 2020ء ‘‘ کے نام سے نغمہ جاری کردیا گیا۔ ڈائریکٹر جنرل آئی ایس پی آر میجر جنرل بابر افتخار نے اپنے ٹویٹ میں کہا یوم دفاع کے موقع پر ’’ہر گھڑی تیار کامران ہیں ہم ‘‘ کے عنوان سے نغمہ جاری کیا گیا ہے جس میں پاک فوج کے شہداء اور ہیروز کو خراج عقیدت پیش کیا گیا ہے۔

پاکستان نیوی نے یومِ بحریہ پر ریلیز کی جانے والی خصوصی ڈاکیوفلم   “سرخرو” کا پرومو جاری کر دیا۔ ترجمان پاک بحریہ نے  بتایا 8 ستمبر کو ریلیز ہونے والی ڈاکیوفلم پاک بحریہ کی جانب سے  بھارتی آبدوز کو پاکستانی پانیوں میں داخل ہونے سے روکنے کی کامیاب کارروائی پر مبنی ہے۔ ترجمان نے بتایا 4 مارچ 2019 کو  ہونے والے اس واقعے میں پاکستان بحریہ نے بھارتی بحریہ کے مذموم ارادوں کو خاک میں ملا دیا۔

وزیراعظم عمران خان نے یوم دفاع کے موقع پر اپنے پیغام میں کہا کہ پاکستان کی تابناک تاریخ میں 6 ستمبر کا دن ہماری  بہادرمسلح افواج کی جرأت، عزم صمیم اورایثارو قربانی کے بے مثال جذبے کی علامت کے طور پر منایا جاتا ہے۔ 55 سال قبل اس دن ہماری پاک فوج کے افسران، سپاہیوں، بحریہ کے جوانوں اور فضائیہ کے شاہینوں نے غیورپاکستانی قوم کے شانہ بشانہ  دنیا پر ثابت کیا کہ وہ ہر قیمت پر مادر وطن کے چپے چپے کے دفاع کیلئے ہمہ وقت تیار رہتے ہیں۔ قوم اور مسلح افواج نے ثابت کیا کہ حجم اہمیت نہیں رکھتابلکہ یہ وہ جذبہ، ولولہ اور جرأت و بہادری ہوتی ہے جو سب سے زیادہ اہمیت رکھتی ہے۔

بھارت نے 370 اور 35 اے کی شقوں کو ختم کرکے نہ صرف اقوام متحدہ کے منشور کی خلاف ورزی کی ہے بلکہ بے گناہ کشمیریوں پر دہشت اور خوف کاراج مسلط کر رکھا ہے۔ بھارت لائن آف کنٹرول پر بھی جارحانہ طرز عمل کا مظاہرہ کر رہا ہے اور ان اشتعال انگیزیوں کا مقصد دنیا کی توجہ مقبوضہ جموں و کشمیر میں بھارتی مظالم سے ہٹانا ہے۔ 

صدر مملکت عارف علوی کا یوم دفاع کے موقع پر کہنا تھا کہ یوم دفاع مسلح افواج اور قوم کی بہادری کی یاد دلاتا ہے۔ دفاعی میدان میں ہم خودانحصاری کی منزل حاصل کرسکتے ہیں۔ 1965 والا جذبہ آج بھی قائم ہے۔سینٹ کی قائمہ کمیٹی برائے داخلہ کے چیئرمین سینیٹر رحمن ملک نے قوم کے شہداء کو خراج تحسین پیش کرتے ہوئے کشمیریوں کے ساتھ اظہار یکجہتی کیا ہے اوریوم دفاع کے موقع پر 1965ء کی جنگ کے شہداء کو خراج تحسین پیش کیا ہے۔ 

یوم دفاع کے موقع پر اپنے پیغام میں انہوں نے کہا کہ 6 ستمبر کا دن پاکستان کی تاریخ میں ہمیشہ یاد رکھا جائے گا،  1965ء میں ہماری بہادر افواج نے ملک کے خلاف بھارت کے عزائم کو خاک میں ملا دیا تھا۔

Share this story

Leave a Reply