وزیراعظم نےدنیا کو تنازعہ کشمیر پر کسی تصادم کی سنگین پیچیدگیوں سےخبردارکردیا

Share this story

ویب ڈیسک – وزیراعظم عمران خان نے دنیا کو کشمیر کے متنازع علاقے پر پاکستان اور بھارت کے درمیان کسی تصادم کی سنگین پیچیدگیوں سے خبردار کیا ہے۔

الجزیرہ ٹی وی کے ساتھ ایک خصوصی انٹرویو میں انہوں نے کہا کہ بھارت کے غیرقانونی زیر قبضہ جموں و کشمیر میں اسی لاکھ افراد ایک کھلی جیل میں بند ہیں اور آٹھ لاکھ قابض بھارتی فوج ان پر ظلم کررہی ہے۔

 وزیراعظم نے کہا کہ پاکستان نے تمام فورمز پر دیرینہ تنازع پر آواز اٹھائی اور یہ سلسلہ جاری رہے گا۔

 عمران خان نے کہا کہ دنیا نے اس مسئلہ پر ردعمل ظاہرنہیں کیا جبکہ بدقسمتی سے وہ بھارت کے ساتھ اپنے تجارتی مفادات کی خاطر بڑے انصاف کو نظرانداز کرناچاہتی ہے۔

ایک سوال کے جواب میں وزیراعظم نے کہا کہ سعودی عرب پاکستان کا ہمیشہ دوست رہے گا۔

 تاہم پاکستان چاہتاہے کہ اسلامی تعاون تنظیم کشمیر کے تنازع پر کلیدی کردار ادا کرے۔

 عمران خان نے کہاکہ وہ کبھی بھی کسی فوجی حل پر یقین نہیں رکھتے اور یہی وجہ ہے کہ انہوں نے اقتدار سنبھالنے کے بعد بھارت کی جانب دوستی کاہاتھ بڑھایا۔

 انہوں نے کہا کہ بھارت کا المیہ یہ ہے کہ وہاں نازی نظریے سے متاثر انتہا پسند حکومت راج کررہی ہے۔

 عمرا ن خان نے افغان مسئلے پر کہاکہ پاکستان نے طالبان اور افغان حکومت کو مذاکرات کی میز پر لانے کےلئے بھرپور کوشش کی۔

 انہوں نے کہا کہ ہم امن اور سیاسی مفاہمت کے قریب پہنچ چکے ہیں۔

 اربوں ڈالر کے چین پاکستان اقتصادی راہداری منصوبے سے متعلق سوال پر عمران خان نے کہاکہ پاکستان اس رستے پر چل کر واقعی فائدہ اٹھا سکتا ہے جس طرح چین نے اپنے لوگوں کو غربت سے نکالا۔

Share this story

Leave a Reply