پاکستان، چین ، روس ، ایران اور ترکی میں دفاعی معاہدہ

Share this story

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) چین نے پاکستان کے ساتھ انٹیلی جنس شیئرنگ کا معاہدہ کیا ہے، چین بائیڈو سسٹم پاکستان کے حوالے کر رہا ہے جو امریکی جی پی ایس سسٹم کا متبادل ہے اور امریکی سسٹم سے کہیں زیادہ بہتر سیٹلائٹ سسٹم ہے ۔

سینئر کالم نگار مظہر برلاس نے کالم میں لکھا ہے کہ۔۔۔ پاکستان کی کمپنی سپارکو چین کے ساتھ مل کر بائیڈونیٹ ورک قائم کرے گی اس کے بعد چین اور پاکستان کسی بھی قسم کے میزائل اور جہازوں کو ہدف بنا سکیں گے۔ اس میں کمال کی بات یہ ہے کہ سی آئی اے اور موساد اسے ہیک نہیں کرسکتے۔

نئے بلاک میں شامل چین، روس، پاکستان، ترکی اور ایران ایک دوسرے کے کاروباری اتحادی بن چکے ہیں، ان ملکوں میں تجارت بہت ہو گی، یہ ایک دوسرے کو اسلحہ بھی فروخت کریں گے۔ ہوسکتا ہے یہ پانچوں ملک ایک ایسا دفاعی معاہدہ کریں کہ ایک ملک پر حملہ سب ملکوں پرحملہ تصور کیا جائے گا۔

اس بلاک میں دو ملکوں کے پاس ویٹو پاور ہے جبکہ ترکی یا پاکستان میں سے کوئی ایک اسلامی دنیا کا چوہدری بن جائے گا۔یہ پانچوں ملک یہ بھی سوچ رہے ہیں کہ پورے بلاک کی کرنسی ایک کر دی جائے۔اگر ایسا ہوگیا تو پھر ڈالر ہماری کرنسی کے مقابلے میں یا تو نیچے چلا جائے گا یا بہت کم قیمت کا رہ جائےگا۔یوں پاکستانی بیٹھے بٹھائے امیر ہو جائیں گے۔

ہم تو پھر بھی کہتے رہیں گےکہ عرب ہمارے دوست ہیں، ہم انہیں جنگوں سے بچاتے ہیں۔ 

Share this story

Leave a Reply