پاکستانی یا ترک افواج آرمینیا کیخلاف جنگ کا حصہ نہیں، آذربائیجان

Share this story

مانیٹرنگ ڈیسک – آذربائیجان کے سفیر نے واضح کیا ہے کہ پاکستان اور ترک افواج آرمینیا کیخلاف جنگ کا حصہ نہیں، آرمینیا  بے بنیاد پراپیگنڈا کررہا ہے۔

اسلام آباد میں آذربائیجان کے سفیر اور دفاعی اتاشی نے کہا کہ یوریشیائی ممالک کی جنگ میں پاکستان اور ترکی کو گھسیٹنے کی ناکام کوشش کی جارہی ہے۔

پاکستان میں سفیر علی علیزادے نے دفاعی اتاشی کرنل مہمن نوروز کے ساتھ مشترکہ پریس کانفرنس میں کہا کہ کئی محاذوں پر شکست کے بعد آرمینیا جھوٹے پراپیگنڈے میں پاکستان اور ترکی کی افواج کی شمولیت کی افواہیں پھیلا رہا ہے، پاکستان اور ترکی آذربائیجان کے اسٹریٹیجک پارٹنر ممالک ہیں۔

یہ بھی بتایا کہ آرمینیا نے آذربائیجان کے 28 فیصد علاقے پر قبضہ کر رکھا ہے، 10 روز کی لڑائی کے بعد ایک شہر اور درجنوں گاؤں چھڑا لیے لیکن اب بھی 10 لاکھ آذری باشندے مشکلات کا شکار ہیں۔

دفاعی اتاشی کرنل نوروز  کا کہنا تھا کہ آذربائیجان کے مقبوضہ علاقوں میں شکست کے بعد آرمین افواج نے شہری آبادی کو نشانہ بنانا شروع کردیا جو تمام عالمی، انسانی حقوق اور جنیوا کنونشن کی خلاف ورزی ہیں۔

سفارتکاروں کا کہنا تھا کہ آذربائیجان جنگ نہیں چاہتا تھا، 30 سال سے تنازع بات چیت کے ذریعے حل کرنے کی کوشش کی لیکن آرمینیا نے مذاکرات کے تمام آپشن ٹھکرا کر حملہ کیا۔

This article originally appeared on Samaa TV

Share this story

Leave a Reply