پاکستان کا بھارت کے غیر قانونی زیر تسلط جموں وکشمیر میں انسانی حقوق کی سنگین پامالیوں کو بے نقاب کرنے کے عزم کا اعادہ

Share this story

اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کے 75ویں اجلاس میں پاکستان کی بھرپور شراکت سے بھارت کے غیر قانونی زیرتسلط جموں وکشمیر کے بارے میں پاکستان کی کثیرجہتی اور بھرپور رسفارتکاری اور دیرینہ عالمی مسائل کے حل کے اس کے عزم کا اظہار ہوتا ہے۔

دفتر خارجہ کے ترجمان زاہد حفیظ چوہدری نے ہفتے کے روز ایک بیان میں کہا کہ وزیراعظم عمران خان نے بھارت کے غیر قانونی زیر تسلط جموں وکشمیر میں انسانی حقوق کی سنگین پامالیوں اور بین الاقوامی قانون کی خلاف ورزی کو بے نقاب کرنے کے پاکستان کے عزم کا اعادہ کیا ہے۔

انہوں نے کہاکہ وزیراعظم نے کشمیریوں کے حق خودارادیت پر بھی زور دیا اور دورحاضر کے متعدد عالمی اور علاقائی چیلنجز کے بارے میں پاکستان کا نقطہ نظر پیش کیا۔

ترجمان نے کہا کہ وزیراعظم نے غربت کے خاتمے، ملک میں آنے والی غیر قانونی رقوم ترقی کے لئے فنڈز کی فراہمی اور حیاتیاتی تنوع کے بارے میں اعلی سطح کے چار سربراہ اجلاسوں میں اہم مقرر کے طور پر بھی شرکت کی۔

انہوں نے کہا کہ وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی نے جنرل اسمبلی کے اعلی سطح کے اجلاس سمیت متعدد سرگرمیوں میں بھی حصہ لیا۔

زاہد حفیظ چوہدری نے کہا کہ وزیراعظم نے عالمی برادری کو اس وقت درپیش بڑے چیلنجز سے نمٹنے کے تناظرمیں ٹھوس تجاویز دیں جن میں ترقی پذیر ممالک کو کورونا کی وجہ سے سماجی واقتصادی مسائل سے نمٹنے کیلئے مالی امداد کی فراہمی بھی شامل ہے۔

Share this story

Leave a Reply