کشمیر ایسی صورتحال سے گزر رہا ہے جس کا اختتام آزادی ہے: وزیراعظم

Share this story

وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ موجودہ حکومت کے موثر اقدامات کی بدولت کشمیر عالمی توجہ کا محور بن گیا ہے اور حکومت ہر عالمی فورم پر مسئلہ کشمیر کو اجاگر کرتی رہے گی۔

انہوں نے یہ بات بدھ کے روز یوم استحصال کے سلسلے میں مظفرآباد میں آزاد جموں وکشمیر اسمبلی کے خصوصی اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہی۔

انہوں نے کہا کہ بھارتی وزیراعظم نریندرمودی نے گزشتہ سال پانچ اگست کو ایک فاش غلطی کی۔

انہوں نے کہا کہ نریندرمودی نے پاکستان کے خلاف نفرت کو پروان چڑھانے اور ہندوتوا کارڈ استعمال کرتے ہوئے انتخابات میں بھاری اکثریت سے کامیابی حاصل کی۔

وزیراعظم نے کہا کہ نریندرمودی اپنے گزشتہ دور حکومت میں مقبوضہ کشمیر کی خصوصی حیثیت ختم کرنے کے بارے میں ہچکچاہٹ کا شکار تھے۔

انہوں نے کہا کہ نریندرمودی نے فاش سٹریٹجک غلطی کی اور وہ ناکام ہوگیا کیونکہ پاکستان بھارتی اقدام اور کشمیریوں پر جاری مظالم پر خاموش نہیں رہا۔

انہوں نے کہاکہ میں نے صدرڈونلڈٹرمپ سمیت اہم عالمی رہنمائوں کو کشمیر کی صورتحال کے بارے میں ذاتی طور پر اعتماد میں لیا اور مودی حکومت کی نازی ازم سے مشابہ پالیسیاں اور فسطائی نظریات بے نقاب کرنے کیلئے ذرائع ابلاغ کا موثر استعمال کیا۔

وزیراعظم نے کہا کہ موثر مہم کی بدولت یورپی اور برطانوی پارلیمنٹ نے کشمیر پر بحث کی اور پاکستانی برادری نے کشمیر کاز کو اجاگر کرنے کیلئے بھرپور مظاہرے کئے۔

انہوں نے کہا کہ مغربی ذرائع ابلاغ پاکستان کے مقابلے میں بھارت کو ایک بہتر ملک ظاہر کرتے تھے تاہم گزشتہ ایک سال کے دوران حکومت پاکستان کی موثر پالیسیوں سے ملک کا تشخص بہتر ہوا ہے۔

 

عمران خان نے کہا کہ کشمیریوں کا جذبہ ختم کرنے کے بھارتی عزائم ناکام ہو چکے ہیں اور کشمیری عوام پر پابندیوں اور مظالم کی وجہ سے وہ اور زیادہ پرعزم اور بہادر ہو گئے ہیں۔

انہوں نے کشمیر کے عوام اور ارکان پارلیمنٹ کو یقین دلایا کہ ان کی حکومت ہرفورم پر مسئلہ کشمیر کو اُجاگر کرے گی۔

انہوں نے پاکستان کے سیاسی نقشے کے اجراء کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ اس کا مقصد دنیا کو بتانا مقصود ہے کہ کشمیر ایک متنازعہ علاقہ ہے اور اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کی قرار دادوں کے مطابق اس کی قسمت کا فیصلہ ہونا ابھی باقی ہے۔

انہوں نے کہا کہ نقشے کا اجراء ناگزیر تھا کیونکہ بھارت نے آزاد کشمیر اور گلگت بلتستان کو اپنے علاقے کے طور پر ظاہر کیا ہوا ہے۔

 

Share this story

Leave a Reply