کویت کے امیرشیخ صباح الاحمدالصباح انتقال کرگئے

Share this story

کویت کے امیر شیخ صباح الاحمد الصباح 91 برس کی عمر میں انتقال کرگئے، وہ 23 جولائی سے امریکا میں زیر علاج تھے۔

کویتی خبر رساں ادارے کونا کے مطابق کویتی ایوان شاہی نے اپنے بیان میں انتہائی رنج و ملال کے ساتھ کویتی عوام، عرب اقوام، امت مسلمہ اور دنیا بھر کے دوست ملکوں کو پیغام دیتے ہوئے بتایا ہے کہ امیر کویت شیخ صباح الاحمد الجابر الصباح انتقال کر گئے ہیں، وہ 16 جون 1929ء کو پیدا ہوئے تھے۔

شیخ صباح 23 جولائی 2020ء کو علاج کیلئے امریکا گئے تھے، اس سے قبل وہ کویت کے ایک اسپتال میں زیر علاج تھے۔

جنوری 2006ء میں امیر کویت کی حیثیت سے ملک بھر کے عوام نے ان کے ہاتھ پر بیعت کی تھی، وہ اپنی آخری سانس تک امیر کویت کے عہدے پر فائز رہے۔

شیخ صباح الاحمد نے ابتدائی تعلیم کویتی اسکولوں میں حاصل کی، اپنی سیاسی زندگی کا آغاز تعمیراتی کونسل کے رکن کی حیثیت سے کیا اور پھر کویتی سپریم کونسل کے انتظامی ادارے کے ممبر بن گئے۔

شیخ صباح الاحمد 1955ء سے مختلف انتظامی عہدوں پر فائز رہے، جن میں محکمہ سماجی و امور محنت امور، وزارت رہنمائی و اطلاعات، وزارت خارجہ، وزارت اطلاعات، نائب وزیراعظم، وزیراعظم کے نائب اول اور وزیراعظم کا عہدہ شامل ہے۔

یاد رہے کہ 91 برس کے امیر کویت شیخ صباح الاحمد الجابر الصباح کا کویت میں آپریشن ہوا تھا، معالجین کے مشورے پر وہ اپنا علاج مکمل کرانے امریکا روانہ ہوئے تھے۔

امیر کویت شیخ صباح نے علاقائی مسائل کے حل کیلئے سفارتکاری سمیت عراق اور شام میں جنگ زدہ قوموں کیلئے ڈونر کانفرنس کی سربراہی بھی کی تھی۔

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے امیر کویت شیخ صباح الاحمد الجابر الصباح کو ان کی خدمات پر امریکا کے اعلی ترین عسکری تمغے سے بھی نوازا تھا۔

پاکستان کے وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی نے کویت کے حکمران شیخ صباح الاحمد الجابر الصباح کے انتقال پر اظہار افسوس کرتے ہوئے کہا ہے کہ امیر کویت کے دور حکمرانی میں پاکستان اور کویت کے مابین دو طرفہ تعلقات کو وسعت ملی، امیر کویت ایک صلح جو، امن پسند اور مشفق حکمران کے طور پر جانے جاتے تھے۔

اسپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر نے کہا ہے کہ امیر کویت کی وفات پر انتہائی دکھ ہوا ہے۔ انہوں نے دعا کی ہے کہ اللہ تعالیٰ مرحوم کو جوار رحمت میں جگہ عطا فرمائے اور پسماندگان کو صبر جمیل اور صبر جمیل پر اجر عظیم عطا فرمائے۔ آمین۔

Share this story

Leave a Reply