یوم آزادی کے موقع پر صدر اور وزیر اعظم کے قوم کے لئے تہنیتی پیغامات 

Share this story

اسلامی جمہوریہ پاکستان کے صدر ڈاکٹر عارف علوی کا پیغام

میرے وطن عزیز!
میں پاکستان کے 74 ویں یوم آزادی کے موقع پر اپنے ہم وطنوں کو دلی مبارکباد پیش کرتا ہوں۔ یہ دن ہمیں قائداعظم محمد علی جناح کی متحرک قیادت میں ہمارے آباؤ اجداد کی بے پناہ قربانیوں کی یاد دلاتا ہے۔ یہ دن ہمارے بانی قائدین کے نظریات پر قائم رہنے اور تحریک پاکستان کے تمام کارکنوں کی بہادر جدوجہد کو خراج عقیدت پیش کرنے کے عزم کی توثیق کرنے کا ایک موقع ہے۔ 

ماضی کے برعکس ، یوم آزادی غیر معمولی مشکل وقت میں منایا جارہا ہے، کیونکہ پوری دنیا کورونا وائرس سے متاثر ہوئی ہے جس نے زندگی کے تمام شعبوں ، یعنی معیشت ، صحت اور تعلیم سمیت منفی اثرات مرتب کیے ہیں۔ 

کورونا وائرس کی وجہہ سے بے تحاشا چیلنجز کا سامنا رہا، لیکن ہم نے دیکھا ہے کہ ہماری قوم نے سمارٹ لاک ڈاؤن کی شاندار حکمت عملی کے ساتھ ان پر قابو پالیا ہے۔ یہ ضروری ہے کہ ہم احتیاطی تدابیر جاری رکھیں۔ ہم نے ماضی میں بھی اکتوبر 2005 میں آنے والے زلزلے اور 2010 میں شدید سیلاب جیسے چیلنجز دیکھے ہیں۔ 

اس موقع پر میں اپنے ہم وطنوں کے جذبے کی تعریف کرتا ہوں جنہوں نے اتحاد کا مظاہرہ کیا اور قدرتی آفات سے متاثرہ افراد کی دل کھول کر مدد کی۔ 

اس تاریخی دن پر میں اپنے ڈاکٹروں، نرسوں اور صحت کی دیکھ بھال کرنے والے کارکنوں کو خراج تحسین پیش کرتا ہوں، جنہوں نے اس وبا کے دوران اپنی جان کو خطرے میں ڈال کر لوگوں کی جانیں بچائیں۔ 

مزید برآں ، میں آگاہی پیدا کرنے اور کووڈ 19 کے سلسلے میں ایس او پیز کو نافذ کرنے میں مدد کرنے میں میڈیا ، علماء ، این ڈی ایم اے ، این سی او سی ، صوبائی حکومتوں ، اور قانون نافذ کرنے والے اداروں کے کردار کی دل کی گہرائیوں سے تعریف کرتا ہوں۔ 

احساس پروگرام کی کامیابی اس حقیقت کی نشاندہی کرتی ہے کہ لوگ کمزور طبقات کا خیال کرنے کے لیے متحد ہوجاتے ہیں۔ 

ہماری معیشت ہر لحاظ سے بہتر ہورہی ہے ، اور مجھے یقین ہے کہ ہم اس ضمن میں ایک اہم درجہ کو پہنچ چکے ہیں۔ 

اس موقعے پر ہمیں اپنے جموں و کشمیر (IIOJ & K) کے بھائیوں اور بہنوں کو فراموش نہیں کرنا چاہئے جنہیں بھارتی سکیورٹی فورسز نے سخت مظالم کا نشانہ بنایا ہوا ہے۔ 05 اگست 2019 کو لاک ڈاؤن کے نفاذ کے بعد سے ہندوستان جعلی مقابلوں میں بے گناہ لوگوں کے ماورائے عدالت قتل کے ساتھ ساتھ تین دہائیوں سے انسانی حقوق کی مجموعی خلاف ورزیوں کا ارتکاب کررہا ہے۔ ہندوستان تمام اقلیتوں کو نشانہ بنا رہا ہے اور ہندوتوا کو مسلط کرنا چاہتا ہے۔ ان جابرانہ اقدامات سے اس کے خلاف نفرت اور ناراضگی میں مزید اضافہ ہوگا۔ میں جموں و کشمیر کے غیّور لوگوں کو یقین دلاتا ہوں کہ پاکستان اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل (UNSC) کی قراردادوں میں لکھے ہوئے حق خود ارادیت کے حق میں اپنی جدوجہد میں ان کی حمایت جاری رکھے گا۔ 

قوم کو مبارکباد دیتے ہوئے ، میں ہر پاکستانی سے مطالبہ کرتا ہوں کہ وہ ثابت قدم رہیں اور ملک کی ترقی اور خوشحالی کے لئے کام کریں۔ قوم کو درپیش معاشرتی ، معاشی اور سلامتی چیلنجوں کا مقابلہ کرنے کے لئے ہمیں متحد ہونے کی ضرورت ہے۔

اسلامی جمہوریہ پاکستان کے وزیر اعظم عمران خان کا پیغام

میں 74 ویں یوم آزادی پر پوری قوم کو مبارکباد پیش کرتا ہوں۔ یہ پُرجوش موقع قائداعظم محمد علی جناح کے وژن پر عمل پیرا ہونے کے ہمارے عہد کی توثیق کرنے کا ایک لمحہ ہے۔ 

یہ دن مٹی کے ان تمام بیٹوں کو خراج تحسین پیش کرنے کا ایک موقع ہے جنہوں نے مادر وطن کی دفاعی اور نظریاتی سرحدوں کے دفاع کے ساتھ ساتھ اپنی جانوں کا نذرانہ پیش کیا۔ 

یہ دن سوچنے اور غور کرنے کا ایک موقع ہے کہ ہم ان نظریات کو حاصل کرنے میں کس حد تک کامیاب ہوۓ ہیں جس کی وجہ سے ایک آزاد ریاست کی تشکیل ہوئی تھی۔ 

ہمارے گذشتہ سات دہائیوں کے سفر کے دوران ، ہم نے مختلف چیلنجوں کا مقابلہ کیا ہے۔ ہم نے خارجی اور داخلی محاذوں پر مشکلات کا مقابلہ کیا ہے۔ پڑوسی ملک کی دشمنی اور  اس خطے میں اپنی اجارہ داری کے جنوں کے ساتھ، دہشت گردی کی لعنت اور قدرتی آفات سے نمٹنے سے لے کر وبائی مرض تک، ہماری قوم نے ہمیشہ لچک اور استقامت کا مظاہرہ کیا ہے۔ 

آج ہم اپنے عہد کا اعادہ کرتے ہیں کہ ہم ثابت قدم رہیں گے اور “اتحاد ، ایمان اور تنظیم” کی مشعل راہ سے ہر چیلنج کو قبول کریں گے۔ اپنے مقصد تک پہنچنے کے لئے ہم تمام تر کوششیں کررہے ہیں۔ ہم پوری کوشش کر رہے ہیں کہ اس ملک میں ایسا نظام حکومت بنائیں جو آزادی کے نظریات اور مقاصد کے عین مطابق ہو۔ ہم ایک ایسا نظام بنانے کی کوشش کر رہے ہیں جہاں قانون کی حکمرانی برقرار ہے۔ 

ہم نے مدینہ کی ریاست کو اپنا رول ماڈل منتخب کیا ہے۔ 

آج ہم آزادی کی خوشیاں منا رہے ہیں لیکن ہمارا دل مقبوضہ کشمیر میں ہمارے بھائیوں کے دکھوں سے بوجھل ہے، جس کو پچھلے ایک سال سے فوجی محاصرے کا سامنا ہے۔ ہم اپنے کشمیری بھائیوں کے حق خود ارادیت کی جدوجہد میں ان کے پیچھے کھڑے ہیں۔ ہم ہر ممکن فورموں پر بے بس کشمیریوں کی آواز بلند کرتے رہیں گے۔ ہم بین الاقوامی برادری کو مقبوضہ کشمیر میں انسانی حقوق کی سنگین پامالیوں اور بی جے پی حکومت اور  آر ایس ایس کے نظریے کے نتیجے میں خطے کے امن و سلامتی کو لاحق خطرات یاد دلاتے رہیں گے۔ مجھے یقین ہے کہ بہادر کشمیریوں کی جدوجہد اور لچک ان کے حق خودارادیت کے ناقابل تسخیر حق کی تکمیل ہوگی۔

اللہ تعالٰی بانیان پاکستان کے وژن کے مطابق ملک کی تعمیر نو کے لئے کامیابیوں کے ساتھ ہماری کاوشوں کو برکت اور کامیابی عطا کرے اور مقبوضہ کشمیر میں اپنے کشمیری بھائیوں کو بھی آزادی عطا کرے تاکہ تقسیم کا ایجنڈا مکمل ہو۔ آمین۔

Share this story

Leave a Reply