یوم استحصال کشمیر: ملک بھر میں تقریب اور ریلیاں، کشمیریوں سے اظہار یکجہتی

Share this story

اسلام آباد: مقبوضہ جموں و کشمیرکی غیر آئینی طور پر حیثیت بدلنے کا ایک سال مکمل ہوگیا، مودی سرکار کے غیر قانونی اقدام کیخلاف پاکستان بھر میں یوم استحصال منایا جا رہا ہے، قوم شہر شہر قریہ قریہ کشمیریوں سے اظہار یکجہتی کا مظاہرہ کر رہی ہے۔

اسلام آباد میں وفاقی وزیر اطلاعات شبلی فراز کی قیادت میں ریلی نکالی گئی، مختلف مکتب فکر کے افراد کی بڑی تعداد شریک ہوئی۔

ریلی سے خطاب میں شبلی فراز نے کہا کہ بھارت نے مقبوضہ کشمیر کو جیل میں تبدیل کر دیا، پوری قوم کشمیریوں کے شانہ بشانہ کھڑی ہے، کشمیریوں کو بھارتی تسلط سے آزادی ضرور ملے گی۔

وفاقی وزیر امور کشمیر و گلگت بلتستان علی امین خان گنڈاپور نے کنونشن سنٹر سے نکلنے والی واک میں شرکت کی۔

ریلی سے خطاب میں علی امین گنڈاپور نے کہا کہ “5 اگست 2019 کا دن مقبوضہ کشمیر کی تاریخ میں ایک اور سیاہ دن ہے، گزشتہ سال اس دن بھارت نے ایک بار پھر تمام تر بین الاقوامی قوانین اور اقوام متحدہ کی قراردادوں کی دھجیاں اڑائیں”۔

کراچی میں کشمیری عوام سے اظہار یکجہتی کیلئے تحریک انصاف نے سکھر تک ٹرین مارچ کیا، شرکا کشمیر کے حق میں نعرے بازی کرتے رہے۔ اس موقع پر پی ٹی آئی رہنما فردوس شمیم نقوی نے کہا کشمیریوں سے اظہار یکجہتی کیلئے ہم کشمیریوں کیساتھ کھڑے ہیں، مودی کا بد ترین چہرہ دنیا کے سامنے بے نقاب کریں گے۔ حلیم عادل شیخ نے کہا وزیراعظم نے جو کشمیر کا نقشہ جاری کیا انشااللہ وہی حقیقی نقشہ بنے گا۔

 مظفرآباد آزاد کشمیر میں بھی منقسم کشمیری خاندانوں نے بھارت کے خلاف ریلی نکالی، ریلی میں شہریوں کی کثیر تعداد شریک ہوئی۔ شرکاء کا کہنا تھا آزادی مانگنے پر بھارت نے کشمیر میں قتل عام کیا، بھارتی ظلم و جبر کو نہ روکا گیا تو خونی لکیر توڑ دینگے، آج مقبوضہ کشمیر پہلے سے بھی زیادہ لہو لہو ہے، کشمیری کسی بھی قیمت پر بھارت سے آزادی حاصل کر کے دم لیں گے۔

کشمیر پر منعقدہ خصوصی ویبینار میں اقوام متحدہ کے لئے پاکستان کے مستقل مندوب منیر اکرم نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ہندوستان نے پر امن بات چیت کے تمام دروازے بند کر دیئے ہیں۔

کشمیری جدوجہد ایک جائز اور قانونی جدوجہد ہے۔ پاکستان کشمیریوں کے حق خوداردیت کی ہر ممکن مدد جاری رکھے گا۔

یوم استحصال کے حوالے سے وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے اپنے خصوصی پیغام میں کہا کہ کشمیریوں کو باور کرانا چاہتا ہوں کہ آپ تنہا نہیں ہیں، ہر پاکستانی آپ کے شانہ بشانہ کھڑا ہے، آپ کی تکالیف کا احساس ہے، کشمیر میں جاری انسانیت سوز مظالم سے دنیا بے خبر نہیں، نہتے کشمیری فوجی محاصرے میں دوہرا لاک ڈاؤن جھیلنے پر مجبور ہیں۔

شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا دنیا بھر میں بھارت کا اصلی چہرہ بے نقاب ہوچکا، وزیراعظم بطور سفیر کشمیریوں کا مقدمہ لڑ رہے ہیں، بطور وزیر خارجہ آپ کی ترجمانی کرنا میرے فرائض میں شامل ہے، کشمیریوں کی آواز کو ہر ملک کے دارالخلافہ تک لے کر جاؤں گا، غاصبوں کو غلط فہمی کہ جبر سے کشمیریوں کی آواز دبالیں گے،4 ماہ کے لاک ڈاؤن سے دنیا کی چیخیں نکل گئیں۔

قومی اسمبلی کے ڈپٹی اسپیکر قاسم خان سوری نے ٹویٹ کیا کہ “5 اگست کا دن دنیا کی تاریخ کاسیاہ ترین دن ہے جب فاشسٹ مودی نے مقبوضہ کشمیر کی خصوصی حیثیت ختم کرتےہوئے وہاں طویل ترین کرفیو نافذکیا، 365 دنوں سے لاکھوں معصوم کشمیری انسانی حقوق کی بدترین پامالی کاشکار ہیں۔ کشمیر کی آزادی تک جنگ جاری رہےگی”۔ 

ان کا مزید کہنا تھا کہ “آج تاریخی دن ہے نیاسرکاری نقشہ مملکت پاکستان، پاکستانیوں وکشمیریوں کی ترجمانی کرتاہے۔ پاکستان کانیا سرکاری نقشہ کشمیریوں کےاصولی مؤقف کی تائید وفاشسٹ ہندوستان کےغاصبانہ اقدامات کی نفی ہے، ہندوستانی میڈیا کی چیخیں بتارہی ہیں کہ مقبوضہ کشمیر ہندوستان کےہاتھ سےگیا”۔ 

وفاقی وزیر مذہبی امور پیر نور الحق قادری نے وادی کشمیر میں بھارتی جبر و استحصال کی طرف دنیا کی توجہ مبذول کرانے کیلئے 5 اگست یوم استحصال پر خصوصی ویڈیو پیغام ریکارڈ کروایا-

Share this story

Leave a Reply