نئےاٹارنی جنرل کی جسٹس فائز عیسیٰ کیخلاف حکومتی نمائندگی سے معذرت

Share this story

نئےاٹارنی جنرل آف پاکستان بیرسٹر خالد جاوید خان نے جسٹس قاضی فائز عیسی کے خلاف حکومتی ریفرنس میں حکومت کی نمائندگی سے معذرت کر لی ہے۔

اٹارنی جنرل خالد جاوید خان کا کہنا ہے کہ اس کیس میں مفادات کا ٹکراؤ ہے۔

حکومت نےایڈیشنل اٹارنی جنرل کو مقدمے میں وکیل مقرر کرنے کی درخواست دی ہے، عدالت سے استدعا کی کہ اس درخواست کو قبول کیا جائے۔

اٹارنی جنرل خالد جاوید خان کا کہنا تھا کہ ایڈیشنل اٹارنی جنرل عامر رحمان کی اس کیس میں تیاری بھی ہے۔

جسٹس عمر عطا بندیال نے ریمارکس دیئے کہ ہم آپ کو مزید تیاری کے لیے وقت دیتے ہیں، آپ نے تین ہفتے کا وقت مانگا ہے۔

اٹارنی جنرل نے عدالت کو بتایا کہ انہیں ملکی مفاد کی خاطر ملک سے باہر جانا ہے، 20 مارچ تک مزید وقت دیں، میں کسی ذاتی کام سے بیرون ملک نہیں جا رہا۔

جسٹس عمر عطا بندیال نے کہا کہ ہوسکتا ہے مارچ میں ہم میں سے ایک جج کو بیرون ملک جانا ہو۔

واضح رہے کہ حکومت نے سپریم کورٹ میں اپنی مرضی کے دلائل دینے پر سابق اٹارنی جنرل انور منصور خان سے استعفیٰ طلب کر لیا تھا۔

This article originally appeared on Jang News

 

 

Share this story

Leave a Reply