چینی سرکاری میڈیا نے مائیک پومپیو کے کورونا وائرس کے دعوے کو ‘دیوانہ پن’ قرار دے دیا

Share this story

پاک جرگہ :  امریکی وزیر خارجہ نے کہا کہ اس کے ‘بہت سارے ثبوت’ موجود ہیں کہ ووہان شہر کی  ایک لیبارٹری سے یہ  وائرس پھیلا ہے۔

چین کے سرکاری نشریاتی ادارے سی سی ٹی وی نے امریکی وزیر خارجہ مائیک پومپیو کے کورونا وائرس کے وبائی مرض کی ابتداء کے بارے میں حالیہ ریمارکس پر حملہ کرتے ہوئے انہیں “پاگل اور مضحکہ خیز” قرار دیا ہے۔

پومپیو نے اتوار کے روز گفتگو کرتے ہوئے کہا ، “بہت سارے شواہد” سے معلوم ہوا ہے کہ اس وائرس کی  ووہان، چین میں واقع ایک لیب سے ابتدا ہوئی، جس سے امریکی عہدیداروں اور دائیں بازو کے گروپوں کے سابقہ ​​دعوؤں پر دوگنا اضافہ ہوا تھا۔ البتہ عالمی ادارہ صحت (ڈبلیو ایچ او) اور مختلف سائنسی ماہرین کی طرف سے بار بار تردید کی گئی ہے۔

اس نظریہ کو صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی انتظامیہ نے بہت زیادہ آگے بڑھایا ہے ، جو پہلے ہی وائرس کے پھیلاؤ کو روکنے میں ناکامی پر چین پر کڑی تنقید کرتے رہے ہیں، جس نے دونوں ممالک کے مابین الفاظ کی جنگ کو آگے بڑھایا ہے۔

گذشتہ ہفتے ، ٹرمپ نے اپنے دعوے کے شواہد پیش کیے بغیر کہا کہ انہوں نے ایسے ثبوت دیکھے ہیں جس سے انہیں یقین ہے کو وائرس کی ابتدا ووہان سے ہی ہوئی ہے۔

 

Share this story

Leave a Reply