ملائیشیا کے وزیراعظم مہاتیر محمد کامستعفی ہونے کااعلان

Share this story

ملائشیا کے وزیر اعظم مہاتیر کا کہنا ہے کہ وہ نومبر کے بعد ہی سبکدوش ہوں گے ، چاہے پی ایچ رہنما کچھ بھی کہیں

وزیر اعظم مہاتیر محمد نے منگل 18 فروری کو کہا کہ انہیں معلوم نہیں ہے کہ جمعہ کو پاکتن ہارپن (پی ایچ) کی صدارتی کونسل کے اجلاس میں ملائیشیا کے متوقع اقتدار منتقلی کی تاریخ طے ہوگی یا نہیں۔

لیکن انہوں نے اس بات کا اعادہ کیا کہ وہ اپنے وعدے کے مطابق وزیر اعظم کے عہدے سے سبکدوش ہوجائیں گے ، لیکن یہ نومبر میں ہونے والے ایشیاء پیسیفک اقتصادی تعاون (اپیک) سربراہی اجلاس کے بعد ہی ہو گا۔

انہوں نے یہاں نامہ نگاروں کو کہا ، “لیکن استعفی دینے کا میرا وعدہ باقی ہے اور (صدارتی کونسل کے ذریعہ) جو بھی فیصلہ ہو، میں صرف اپیک کے بعد ہی استعفی دوں گا۔”

یہ پوچھے جانے پر کہ کیا وہ خود اس مسئلے کو اٹھائیں گے ، 94 سالہ تون ڈاکٹر مہاتیر نے کہا کہ وہ ایسا نہیں کریں گے۔

 

پی ایچ کی چار جماعتوں کے سب سے سینئر رہنماؤں پر مشتمل پی ایچ کی صدارتی کونسل ، جمعہ کے روز اس مسئلے کو حل کرنے کے لئے میٹنگ کر رہی ہے کہ ڈاکٹر مہاتیر کے 72 سالہ رکن پارلیمنٹ انور ابراہیم کو وزارت عظمیٰ کا منصب سنبھالنے کے بعد حالات کیا ہونگے-

ہم نیوز کے مطابق ملائیشیا کی پاکاتان ہراپان جماعت 2018 کو برسراقتدار آئی تھی اور اس وقت اتحادیوں میں طے پایا تھا کہ مہاتیر محمد وزیراعظم کا عہدہ72 سالہ انوار ابراہیم کو سونپیں گے تاہم تاریخ اور مدت کا تعین نہیں کیا گیا تھا۔

خیال رہے کہ ملائیشیا کے گزشتہ عام انتخابات میں مہاتیرمحمد اوران کے اتحادیوں نے برسراقتدار پارٹی کو 60 سال بعد شکست دے کر کامیابی حاصل کی تھی۔

Share this story

Leave a Reply