ہندوستانی اسپتالوں کا مسلمان مریضوں کو داخل کرنے سے انکار، کورونا وائرس کے سبب اسلامو فوبیا میں اضافہ 

Share this story

جھارکھنڈ اور راجستھان میں دو نوزائیدہ بچوں کی موت ہوگئی جب اسپتالوں نے ان کی مسلم ماؤں کو علاج سے انکار کردیا

بھارت میں کورونا وائرس سے متعلق اسلامو فوبیا میں اضافے کی وجہ سے  اسپتالوں نے مسلم ماؤں کو داخل کرنے سے انکار کر دیا، جس کی وجہ سے  دو نوزائیدہ بچوں کی موت ہوگئی ہے۔

ریاست جھارکھنڈ میں ، جمشید پور شہر کے ایم جی ایم اسپتال میں علاج سے روکنے کے بعد ایک مسلمان خاتون کا  اسقاط حمل ہو گیا۔

30 سالہ رضوانہ خاتون ، خون بہنے لگنے کے بعد اسپتال پہنچی تھی۔ کورونا وائرس پھیلانے کے الزام میں ، اسے بھی مارا پیٹا گیا اور اپنا ہی خون صاف کرنے کو کہا گیا۔

اس ماہ کے شروع میں ، راجستھان کے بھرت پور ضلع میں ایک سرکاری اسپتال نے مسلمان ماں کو داخل کرنے سے انکار کر دیا، جس کی وجہ سے ایک بچے کی موت ہوگئی۔

یاد رہے کہ برسراقتدار بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کے ممبروں نے مارچ کے وسط میں نئی دہلی میں تبلیغی جماعت پر کورونا وائرس پھیلانے کا الزام عائد کیا تھا۔

Share this story

Leave a Reply