صدر ٹرمپ کا عالمی ادارہ صحت (ڈبلیو ایچ او) کی فنڈنگ روکنے کا اعلان

Share this story

ڈبلیو ایچ او نے کرونا وائرس کے پھیلاؤ کو چھپایا، اس کا احتساب ہونا چاہیے، صدر ٹرمپ

امریکہ کے صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے کہا ہے کہ وہ عالمی ادارہ صحت کی فنڈنگ روکنے کا ارادہ رکھتے ہیں جس نے حالیہ بحران میں انتہائی بدنظمی کا مظاہرہ کیا اور کرونا وائرس کو چھپایا۔ وہ اپنی بنیادی ذمے داری انجام دینے میں ناکام رہا اور اس کا احتساب ہونا چاہیے۔

وائٹ ہاؤس میں معمول کی نیوز بریفنگ کے دوران صدر ٹرمپ نے الزام لگایا کہ عالمی ادارہ صحت کی نااہلی کی وجہ سے دنیا میں کرونا وائرس کے کیسز بیس گنا زیادہ ہوئے۔ انھوں نے یاد دلایا کہ ڈبلیو ایچ او نے چین پر سفری پابندیاں لگانے پر انھیں تنقید کا نشانہ بنایا تھا۔

فروری تک ڈبلیو ایچ او کا کہنا تھا کہ جن ملکوں میں کرونا وائرس کے کیسز ہیں، وہاں سفری پابندیاں لگانے کی ضرورت نہیں ہے اور یہ وائرس کا پھیلاؤ روکنے کا موثر طریقہ نہیں ہے۔ صدر ٹرمپ نے کہا کہ ڈبلیو ایچ او نے چین کی یقین دہانیوں کو تسلیم کیا اور چینی حکومت کے اقدامات کا دفاع کیا بلکہ اس کی نام نہاد شفافیت کی تعریف بھی کی۔

امریکہ ہر سال عالمی ادارہ صحت کو 50 کروڑ ڈالر فراہم کرتا ہے جو ادارے کے کل بجٹ کا 15 فیصد ہے۔ صدر ٹرمپ نے کہا کہ وہ ڈبلیو ایچ او کی رقم روک کر ان مقامات پر خود خرچ کریں گے جہاں اس کی ضرورت ہے۔

ٹرمپ نے کہا کہ امریکہ ہر سال ڈبلیو ایچ او کو 400 ملین سے 500 ملین ڈالر کی فنڈز فراہم کرتا ہے ، جب  کہ چین “تقریبا 40 ملین ڈالر کا حصہ ڈالتا ہے۔”

صدر ٹرمپ کو خود بھی اس تنقید کا سامنا ہے کہ انھوں نے کرونا وائرس کو روکنے کے لیے جلدی اور موثر اقدامات نہیں کیے جس کی وجہ سے امریکہ میں لاکھوں کیسز سامنے آچکے ہیں اور ہزاروں افراد ہلاک ہوگئے ہیں۔

صدر ٹرمپ اس تنقید کے جواب میں کہتے ہیں کہ انھوں نے بروقت اقدامات کیے تھے اور چین اور یورپ پر سفری پابندیاں لگانے کی وجہ سے ان پر اس وقت تنقید کی جارہی تھی لیکن انھوں نے وہی فیصلے کیے جن کی ضرورت تھی۔
 

Share this story

Leave a Reply