امریکا: سیاہ فام شہری کی ہلاکت پر ہنگامے، لاس اینجلس سمیت 13 شہروں میں کرفیو نافذ

Share this story

ریاستوں کے مطالبے پر نیشنل گارڈ کی تعیناتی کے باوجود احتجاج جاری ہے اور مزید شہروں میں کرفیو نافذ کردیا گیا ہے۔

پولیس کی تحویل میں جارج فلائیڈ کی ہلاکت اور پولیس کی طرف سے تشدد کی دیگر کارروائیوں پر احتجاج کے بعد شہروں میں بدامنی کی ایک اور رات ابھی ختم نہیں ہوئی۔

مینیسوٹا اور  منیاپولس میں مظاہرین کا مطالبہ ہے کہ فلائیڈ کی موت میں ملوث تمام افسران پر الزام عائد کیا جائے۔

نیشنل گارڈ امریکہ کے متعدد بڑے شہروں میں سرگرم عمل ہوگئے ، لیکن مظاہرین پر قابو نہیں پایا جا سکا۔

واشنگٹن:   امریکا میں سیاہ فام شہری کی ہلاکت کے بعد پرتشدد مظاہروں کا سلسلہ پانچویں روز میں داخل ہوگیا، لاس اینجلس سمیت 13شہروں میں کرفیو نافذ کردیا گیا۔جگہ جگہ پولیس اور مظاہرین میں جھڑپوں کا سلسلہ تھم نہ سکا، 13شہروں میں نیشنل گارڈز تعینات کردیئے گئے۔

 

لندن میں بھی امریکی واقعے کے خلاف احتجاج کیا گیا۔سیاہ فام شہری کی ہلاکت کے بعد امریکا میں ہنگاموں کا سلسلہ تھم نہ سکا، کئی ریاستیں میدان جنگ بن گئیں۔ ریاست منی سوٹا، لاس اینجلس میں صورتحال انتہائی کشیدہ ہے، کرفیو کے باوجود مظاہرین نے کئی سپراسٹورز پر دھاوا بول دیا۔ شیشے توڑ کر قیمتی سامان لوٹ لیا۔ پولیس کچھ نہ کر سکی۔

Courtesy Daily Mail, UK

 

Share this story

Leave a Reply