‘بھارت لداخ میں سرجیکل اسٹرائیک کيوں نہيں کرتا؟’

Share this story

اسلام آباد — پاکستان نے بھارت کو خبردار کيا ہے کہ اگر اس نے پاکستان پر فضائی حملہ کرنے کی کوشش کی تو اس کا منہ توڑ جواب ديا جائے گا۔

پاکستان کے وزير خارجہ شاہ محمود قريشی نے کہا ہے کہ پاکستان نے خطے ميں ہميشہ امن کی بات کی ہے اور وہ خطے ميں کشيدگی نہيں پھيلانا چاہتا جب کہ پاکستان اپنا دفاع کرنا بھی جانتا ہے۔

پاکستانی وزيرِ خارجہ کا يہ بيان بھارت کے وزير داخلہ امت شاہ کی اس دھمکی کے بعد سامنے آيا جس میں انہوں نے کہا تھا کہ بھارت کے وزيرِ اعظم نريندر مودی نے پاکستان میں سرجيکل اسٹرائيک کا حکم دے ديا ہے کيوں کہ بھارت اب اپنی سرحدوں پر کسی بھی قسم کی دراندازی برداشت نہيں کر سکتا۔

شاہ محمود قريشی نے واضح کيا کہ امت شاہ کا بيان غير ذمہ دارانہ ہے اور عالمی برادری کو اس کا نوٹس لينا چاہیے۔

بھارت لداخ میں سرجيکل اسٹرائیک کيوں نہيں کرتا؟
بھارت اور چين کے درميان لداخ میں کشيدگی کے حوالے سے شاہ محمود قريشی نے کہا کہ بھارت لداخ میں سرجيکل اسٹرائیک کيوں نہيں کرتا؟

ان کے مطابق بھارت ميں معاشی حالات بگڑ چکے ہيں۔ نئی دہلی اپنی ناکاميوں کا ملبہ پاکستان پر ڈالنا چاہتا ہے اور اپنی اندرونی حالات سے توجہ ہٹانے کے لیے پاکستان کو دھمکياں دے رہا ہے۔

ياد رہے کہ بھارت اور چين کے درميان گزشتہ ايک ماہ سے سرحدی علاقے لداخ ميں دونوں ممالک کی فوجيں آمنے سامنے ہيں تاہم ​نئی دہلی اور بیجنگ نے لداخ سیکٹر تنازع کے حل کے لیے مذاکرات جاری رکھنے پر رضا مندی ظاہر کی ہے۔اس سلسلے میں ہفتے کو دونوں ممالک کی لیفٹننٹ جنرلز کی سطح پر مذاکرات ہوئے تھے۔

More on this story on VOA Urdu

Share this story

Leave a Reply