جارج فلائیڈ کی ہلاکت پر احتجاج

Share this story

امریکہ کے دارالحکومت واشنگٹن ڈی سی سمیت دیگر کئی شہروں میں سیاہ فام شہری جارج فلائیڈ کی ہلاکت کے خلاف ہونے والے مظاہرے شہریوں کی شرکت کی تعداد کے لحاظ سے اب تک کے سب سے بڑے مظاہرے بتائے جا رہے ہیں۔ مظاہرین کا سب سے بڑا مطالبہ پولیس نظام میں اصلاحات اور مساوات ہے۔ احتجاج میں ہفتے کے دن میوزک بینڈز بھی ٹرک پر پرفارم کرتے رہے۔

1- احتجاج میں شریک اکثر مظاہرین کا نعرہ ہے کہ ‘جب تک انصاف نہیں ہوگا تب تک امن نہیں آ سکتا۔’

2- مظاہرین کی جانب سے سب سے اہم مطالبہ پولیس نظام میں اصلاحات اور مساوات ہے۔

3- واشنگٹن میں ووٹرز کی رجسٹریشن کے لیے ایک کیمپ بھی قائم کیا گیا ہے۔ مقامی سرگرم کارکن نوجوانوں پر زور دے رہے ہیں کہ وہ ووٹ کی طاقت استعمال کریں۔ اس لیے لازم ہے کہ اپنا ووٹ رجسٹر کرائیں۔

4- احتجاج میں شریک میوزک بینڈز بھی ٹرک پر پرفارم کرتے رہے۔

5- بلیک لائف میٹر اور آئی کانٹ بریتھ ، نو جسٹس نو پیس کے نعروں کے ساتھ ساتھ میوزک کی تھاپ پر لوگ رقص کرتے رہے۔

6- کئی مظاہرین سمجھتے ہیں کہ امریکہ اہم موڑ پر کھڑا ہے جہاں تبدیلی آ نہیں رہی بلکہ وہ اپنے مقصد میں پہلے ہی کامیاب ہو چکے ہیں۔

7- مظاہرین مطالبات کے ساتھ ساتھ یہ بھی باور کرانا چاہتے ہیں کہ سفید فام افراد کی طرح ہی سیاہ فام افراد کی زندگی بھی اہم ہے۔

8- احتجاج میں شریک افراد مظاہروں میں زیادہ سے زیادہ لوگوں کی شرکت پر زور سے رہے ہیں ۔ ان کا نعرہ ہے کہ جو لوگ مظاہروں میں شریک نہیں ہو رہے کیا وہ اپنے ساتھ بھی کسی ایسے ہی واقعے کے منتظر ہیں؟
 

Source VOA Urdu

Share this story

Leave a Reply