سٹیزن پورٹل عوام کو با اختیار بنانے کی جانب ایک قدم ہے، وزیراعظم

Share this story

وزیراعظم عمران خان نے لوگوں کو ہدایت کی ہے کہ حکومت کے مختلف محکموں کے خلاف شکایات کے فوری ازالے کے لئے بڑے پیمانے پر پاکستان سٹیزن پورٹل کو استعمال کریں۔

وہ جمعہ کی شام اسلام آباد میں پاکستان سٹیزن پورٹل کی دو سالہ کارکردگی کے سلسلے میں ایک تقریب سے خطاب کر رہے تھے۔

وزیراعظم نے کہا کہ یہ پورٹل وزیراعظم کے ڈلیوری یونٹ کے تحت کام کر رہا ہے جو کہ عوام کو بااختیار بنانے کی جانب ایک قدم ہے۔

انہوں نے کہا کہ حکومت نادار ،معمر،یتیموں اور معذور افراد سمیت معاشرے کے کمزور طبقوں کی دیکھ بھال حکومت کے فرائض میں شامل ہے۔

عمران خان نے کہا کہ تیس لاکھ افراد نے شکایات کے ازالے کے لئے پاکستان سٹیزن پورٹل کا استعمال کیا اور ریلیف کی فراہمی کے سلسلے میں ان کے مطمئن ہونے کی شرح بہت بلند ہے۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان سٹیزن پورٹل وزارتوں اور محکموں کے ردعمل کے بارے میں مکمل آگاہی فراہم کرتا ہے۔وزیراعظم نے کہا کہ ہمارا بلدیاتی نظام عوام کی ضروریات کو پورا کرنے میں ناکام ثابت ہوا ہے اور پاکستان تحریک انصاف کی حکومت ایک نیا بلدیاتی نظام متعارف کرانا چاہتی ہے جس کے تحت گاؤں کی سطح پر براہ راست فنڈز فراہم کی جائیں گے۔

انہوں نے کہا کہ شہری مسائل کو مقامی سطح پر حل کرنے کے لئے بڑے شہروں میں براہ راست انتخابات کے ذریعے سٹی گورنمنٹس قائم کی جائیں گی۔

وزیراعظم نے پاکستان سٹیزن پورٹل کے ذریعے بیرون ملک مقیم پاکستانیوں کے مسائل کو حل کرنے پر مکمل اطمینان کا اظہار کیا۔

وزیراعظم نے عوام سے کہا کہ اگر ڈپٹی کمشنر، اسسٹنٹ کمشنر یا پولیس افسر ان سے رشوت مانگیں تو وہ پورٹل پر اپنی شکایات درج کریں۔ انہوں نے یقین دلایا کہ حکومت اس قسم کے بدعنوان عہدیداروں کے خلاف کارروائی کرے گی۔

اس سے پہلے وزیراعظم کے ڈیلیوری یونٹ کے سربراہ عادل سعید صافی نے پورٹل کی دو سالہ کارکردگی کا جائزہ پیش کرتے ہوئے کہا کہ تقریباً 30 لاکھ شکایات موصول ہوئیں اور ان میں سے زیادہ تر کا ازالہ کر دیا گیا۔

انہوں نے کہا کہ پورٹل کے ذریعے بعض سرکاری محکموں میں قوانین اور قواعد و ضوابط کی تیاری کے سلسلے میں بھی مدد ملی ہے جو کہ پہلے سے موجود نہیں تھے۔

Share this story