Jirga South Asia

  • This topic is empty.
Viewing 1 post (of 1 total)

  • Author
    Posts
  • #12092
    Syed Muhammad
    Moderator

    اسلام آباد — امریکہ نے طے شدہ پالیسی کے مطابق افغانستان میں تعینات فوجی اہلکاروں کی تعداد کم کر کے 2500 کر دی ہے۔ صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے گزشتہ سال نومبر میں افغانستان میں تعینات فورسز کی تعداد میں مزید کمی کا اعلان کیا تھا۔

    صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے جمعرات کو مختصر بیان میں کہا کہ افغانستان میں امریکہ کی فورسز کے اہلکاروں کی تعداد گزشتہ 19 سال میں کم ترین سطح پر آ گئی ہے۔

    خبر رساں ادارے ‘ایسوسی ایٹڈ پریس’ کے مطابق امریکہ کی فوج نے طے شدہ پالیسی کے تحت جمعے کو افغانستان میں تعینات اہلکاروں کی تعداد کم کرکے 2500 کر دی ہے۔ امریکی فورسز کی تعداد میں یہ کمی کانگریس کی عائد کردہ پابندی کے خلاف ہے۔

    صدر ٹرمپ نے بیان میں افغانستان میں دو دہائیوں سے جاری جنگ اور امریکی فوج کے مکمل انخلا کے حوالے سے کہا کہ وہ ہمیشہ سے نہ ختم ہونے والی جنگوں کو روکنے کے پُر عزم رہے ہیں۔

    دوسری جانب دو ہفتے قبل امریکہ کی کانگریس نے نیشنل ڈیفنس اتھرائزیشن ایکٹ (این ڈی اے اے) منظور کیا تھا جس کے تحت پینٹاگون کو فورسز کی تعداد 4000 یا یکم جنوری کو افغانستان میں موجود اہلکاروں کی تعداد کو کم کرنے کے لیے رواں سال یا گزشتہ سال کے بجٹ سے رقم خرچ کرنے سے روک دیا گیا ہے۔

    یاد رہے کہ امریکی کانگریس نے اس ایکٹ کی منظوری یکم جنوری کو ہی دی تھی۔ بعد ازاں صدر ٹرمپ نے اس کو ویٹو کر دیا تھا۔ لیکن امریکہ کی کانگریس کے اویان نمائندگان اور سینیٹ نے صدر کے ویٹو کے ختم کر دیا تھا۔

Viewing 1 post (of 1 total)
  • You must be logged in to reply to this topic.

Comments are closed, but trackbacks and pingbacks are open.