• This topic is empty.
Viewing 1 post (of 1 total)

  • Author
    Posts
  • #10483
    Shahid Masood
    Participant

    ویب ڈیسک: امریکی صدارتی انتخابات میں ڈیموکریٹک پارٹی کی امیدوار مسلمان خاتون الہان عمرعبداللہ ریاست منی سوٹا سے ایک بار پھر کامیاب ہوگئی ہیں۔

    سال2018 میں ہونے والے امریکہ کے وسط مدتی انتخابات میں الہان عمر نے منی سوٹا سے 72 فیصد ووٹ حاصل کیے تھے، جبکہ ان کے مدمقابل ری پبلکن امیدوار نے صرف 22 فیصد ووٹ حاصل کیے۔

    امریکی کے صدارتی انتخابات2020 میں الہان عمر نے منی سوٹا سے2 لاکھ51 ہزار820 ووٹ حاصل کیے جو ڈالے گئے ووٹوں کا64.6 فیصد بنتا ہے۔

    الہان عمر کے حریف اور رپبلکن پارٹی کے امیدوار جونسن نے1 لاکھ907 ووٹ حاصل کیے جو کہ25.9 فیصد ہیں۔

    Photo credit Fibonacci Blue

    الہان عمرکے والدین کا تعلق صومالیہ سے ہے اور سول جنگ کے دوران 4 سال تک کینیا کے پناہ گزین کیمپ میں مقیم رہیں۔

    ان کے خاندان نے 1997 میں منی سوٹا میں رہائش اختیار کی، جہاں صومالی افراد کی بڑی تعداد مقیم ہے۔

    ڈیمو کریٹ امیدوار راشدہ طلائب اور الہان عمر سےقبل کوئی مسلم خاتون کبھی کانگریس سے منتخب نہیں ہوئی تھی۔ ان دونوں خواتین نے امریکہ کے وسط مدتی انتخابات2018 میں پہلی بار کامیابی حاصل کی تھی۔

    This article originally appeared on Hum News

Viewing 1 post (of 1 total)
  • You must be logged in to reply to this topic.

Comments are closed, but trackbacks and pingbacks are open.