• This topic is empty.
Viewing 1 post (of 1 total)

  • Author
    Posts
  • #13402
    Farhan Khan
    Participant

    واشنگٹن: کرونا وائرس کی وبا سے سب سے زیادہ متاثر ہونے والے ملک امریکا میں بڑا کرونا فراڈ سامنے آیا ہے، اور سیکڑوں امریکیوں پر مقدمات درج کیے گئے ہیں۔

    تفصیلات کے مطابق امریکا میں کرونا ریلیف اسکیمز کا ناجائز فائدہ اٹھانے میں ملوث 474 افراد کے خلاف مقدمہ دائر کیا گیا ہے، یہ اقدام محکمہ انصاف کی جانب سے اٹھایا گیا۔

    امریکی محکمہ انصاف کے مطابق ریلیف اسکیموں سے فراڈ کے ذریعے 474 امریکی شہریوں نے 50 کروڑ 69 لاکھ ڈالر کی رقم حاصل کرنے کی کوشش کی تھی، 120 افراد ایسے تھے جنھوں نے پے چیک پروٹیکشن پروگرام سے فراڈ کے ذریعے امدادی رقم وصول کرنے کی کوشش کی۔

    یہ اسکیم دراصل چھوٹے کاروباروں اور بے روزگار افراد کو ریلیف دینے کے لیے شروع کیا گیا تھا، جسے شہریوں نے فراڈ کا ذریعہ بنایا، ریاست ٹیکساس کے ایک رہائشی نے 15 مختلف پی پی پی قرضوں کے لیے درخواست دے کر 2 کروڑ 48 لاکھ ڈالر فراڈ کے تحت حاصل کرنے کی کوشش کی، اور وہ ایک کروڑ 73 لاکھ ڈالر وصول کرنے میں کامیاب ہو گیا تھا۔

    محکمہ انصاف کا کہنا تھا کہ ٹیکساس کے رہائشی نے اس رقم سے کئی گھر، جیولری اور مہنگی گاڑیاں خریدیں۔

    امریکی اٹارنی جنرل نے ایک بیان میں کہا کہ یہ آپریشن ہنگامی صورت حال کا ناجائز فائدہ اٹھانے والوں کے لیے واضح پیغام ہے۔ ان لوگوں نے عوام کے ٹیکس سے متعارف کیے گئے وسائل چوری کیے۔

    Source: ARY News

Viewing 1 post (of 1 total)
  • You must be logged in to reply to this topic.

Comments are closed, but trackbacks and pingbacks are open.