• This topic is empty.
Viewing 1 post (of 1 total)

  • Author
    Posts
  • #10683
    Shaista Khan
    Participant

    پشاور(ویب ڈیسک) اسلامیہ کالج یونیورسٹی پشاورکی طالبات نے اداروں میں ہراسانی کے واقعات کیخلاف احتجاج کیا، اساتذہ پرچوں کی چیکنگ اور تحقیقی مقالوں کے دوران طالبات کو ہراساں کرتے ہیں،طالبات نے تحفظ کا مطالبہ کردیا۔

    خبر رساں ادارے این این آئی کے مطابق اسلامیہ کالج یونیورسٹی پشاور کے طلباء اور طالبات نے ادارے میں ہراسانی کے واقعات کے خلاف احتجاجی مظاہرہ کیا جس میں کثیر تعداد میں طلباء و طالبات نے شرکت کرتے ہوئے کالج انتظامیہ اور اساتذہ کے خلاف شدید نعرے بازی کی۔طالبات کا اساتذہ پر الزامات لگاتے ہوئے کہنا تھا کہ اساتذہ پرچوں کی چیکنگ اور تحقیقی مقالوں کے دوران طالبات کو ہراساں کرتے ہیں۔

    میرے کمرے اور باتھ روم میں کیمرے لگائے گئے تھے۔ مریم نواز

    طالبات کا کہنا تھا کہ کالج انتظامیہ کی جانب سے ان کو کوئی تحفظ فراہم نہیں کیا جارہا،،ہمیں جلد سے جلد تحفظ دیا جائے۔ طالبات نے یہ بھی انکشاف کیا کہ کئی ڈیپارٹمنٹس میں اس طرح ہوتا ہے کہ اساتذہ سے تعلق نہ بنانے والی طالبات کے ریسرچ پیپر اپروو نہیں کیے جاتے اور نتیجے کے طور پر سال ضائع ہو جاتے ہیں دوبارہ سے یونیورسٹی کی فیس ادا کرکے پیپر دینا پڑتے ہیں۔ 

Viewing 1 post (of 1 total)
  • You must be logged in to reply to this topic.

Comments are closed, but trackbacks and pingbacks are open.