Jirga South Asia

  • This topic has 0 replies, 1 voice, and was last updated 3 weeks, 1 day ago by Syed Muhammad.
Viewing 1 post (of 1 total)

  • Author
    Posts
  • #7720
    Syed Muhammad
    Moderator

    وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ بھارتی حکومت کے ہندو توا نظریے سے علاقائی امن اورسلامتی کو شدید خطرہ ہے ۔

    انہوں نے پیر کے روز اسلام آباد میں ایک نیوز کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ تمام علاقائی ممالک کو بی جے پی کی پالیسیوں پر تشویش ہے ۔

    انہوں نے اس امر پر افسوس ظاہر کیاکہ بھارتی حکومت نے سارک فورم کو غیر فعال بنادیا ہے ۔

    شاہ محمود قریشی نے اس بات پر بھی افسوس کااظہارکیا کہ کورونا وائرس کی وبا پھوٹنے کے باوجود بھارتی حکومت نے مقبوضہ جموں وکشمیر میں اپنے مظالم میں کمی نہیں کی ۔

    انہوں نے کہاکہ بھارت کی طرف سے محاصرے اور تلاشی کی کارروائیوں میں بے گناہ لوگوں کو نشانہ بنانے کا سلسلہ بھی جاری ہے۔

    ایک سوال کے جواب میں وزیرخارجہ نے کہاکہ اقوام متحدہ کشمیر کے دیرینہ تنازع پر پاکستان کے موقف کی حمایت کرتا ہے۔

    انہوں نے کہاکہ ہم نے اقوام متحدہ کو متعدد خطوط لکھے ہیں جن میں بھارتی فوج کی طرف سے بے گناہ کشمیریوں پر ڈھائے گئے مظالم کو اجاگر کیا ہے ۔

    شاہ محمود قریشی نے کہاکہ پاکستان نے اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کی قراردادوں کا ہمیشہ احترام کیا تاہم بھارت کی نظر میں ان کی کوئی وقعت نہیں۔

    انہوں نے کہاکہ اقوام متحدہ کے انسانی حقوق کی کمشنر کی رپورٹس مقبوضہ وادی میں بھارت کی طرف سے انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں کا منہ بولتا ثبوت ہیں اور دنیا کو وہاں صورتحال کا نوٹس لینا چاہیے ۔

    وزیرخارجہ نے کہاکہ بھارت میں مسلمانوں سے امتیازی سلوک کیاجارہا ہے انہوں نے کہاکہ نئی دلی میں مسلمانوں کے قتل عام کی رپورٹس دنیا بھر کے ذرائع ابلاغ نے دی ہیں۔

    ادھر وزیرخارجہ نے ایک بیان میں کہا کہ بھارت کو کشمیر کے بارے میں اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کی قراردادوں کی خلاف ورزی کے اپنے رویے پرنظر ثانی کی ضرورت ہے ۔

    انہوں نے کہاکہ پاکستان کئی طریقوں اور فورمز پر بھارت کے مذموم عزائم بے نقاب کرچکا ہے اور کشمیر ہماری اولین ترجیح ہے ۔

    وزیرخارجہ نے کہاکہ سلامتی کونسل کی رکنیت کیلئے مخصوص طریقہ کار پر عمل کرنا ہوتا ہے۔

    انہوں نے کہاکہ متعدد ممالک سلامتی کونسل کی کئی برسوں تک رکنیت کے خواہش مند کئی ممالک برس ہابرس اس کیلئے جدوجہد کرتے ہیں اور یہ ہرملک کا استحقاق ہے ۔

    انہوں نے کہاکہ سلامتی کونسل کی رکنیت اختیار کرنے کیلئے ایک طویل ضابطہ کار پرعمل درآمد کرنا پڑتا ہے اور پاکستان بھی اس کی رکنیت کی کوششوں میں سرگرم عمل ہے ۔

    تا ہم انہوں نے کہاکہ ہم سفارتی اقدار کے مطابق اپنی حکمت عملی تیارکریں گے ۔

    بھارتی وزیردفاع کے ایک بیان کے جواب میں وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا کہ کشمیری عوام بھارت سے تاریخ میں پہلی مرتبہ اس قدر نالاں ہیں کہ اس سے قبل کبھی نہ تھے ۔

    انہوں نے بھارتی وزیردفاع کو چیلنج کیاکہ وہ مظفر آباد کا دورہ کریں اور دیکھیں کہ وہاں کے عوام ان کی حمایت کرتے ہیں یا نہیں ۔
     

Viewing 1 post (of 1 total)
  • You must be logged in to reply to this topic.