Jirga Pakistan

  • This topic has 0 replies, 1 voice, and was last updated 4 months ago by admin.
Viewing 1 post (of 1 total)

  • Author
    Posts
  • #9666
    admin
    Keymaster

    مانیٹرنگ ڈیسک – پاکستان ہندو کونسل کے سربراہ ڈاکٹر رمیش کمار نے کہا ہے کہ بھارتی حکومت ہندو مذہب کے نظریے کے خلاف کام کررہی ہے۔

    جمعہ کے روز اسلام آباد میں ڈپلومیٹک انکلیو کے سامنے دھرنے سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ہندوبرادری جودھ پور کے المناک واقعہ کے بعد صدمے میں ہے جہاں پر گیارہ پاکستانی ہندو پراسرار حالت میں قتل کئے گئے۔

    انہوں نے کہا کہ پاکستان کی ہندوبرادری کی طرف سے وہ بھارتی ہائی کمیشن کے حکام کوایک قرار داد پیش کریں گے۔

    ڈاکٹر رمیش کمار نے بھارتی وزیراعظم نریندرمودی سے کہا کہ وہ انتہا پسندی کو فروغ دینے کے بجائے خطے کے امن واستحکام کیلئے کام کرے۔

    بعد ازاں دھرنے کے شرکاء نے ایک قرارداد کی منظوری دی جس میں بھارتی حکومت سے مطالبہ کیا گیا کہ وہ جودھ پور واقعہ کی منصفانہ اور شفاف تحقیقات کو یقینی بنانے کیلئے پاکستان کو شامل کرے۔

    قرار داد میں بھارت میں حال ہی میں منظور کردہ شہریت ترمیمی بل کی منسوخی پر زور دیا گیا اور اسے انسانی حقوق کی خلاف ورزی اور متنازعہ قرار دیا گیا۔

    قرارداد میں کہا گیا کہ سمجھوتہ ایکسپریس کا کیس بھی کھولنا چاہیے تاکہ بے گناہ متاثرین کو انصاف مل سکے۔

    قرارداد میں بھارت کے غیر قانونی زیر قبضہ جموں وکشمیر میں رہنے والے بہن بھائیوں کے ساتھ اظہار ہمدردی کیا گیا اور وہاں ہونے والی انسانی حقوق کی پامالیوں کے خاتمے کا مطالبہ کیا۔

Viewing 1 post (of 1 total)
  • You must be logged in to reply to this topic.