Jirga South Asia

  • This topic is empty.
Viewing 1 post (of 1 total)

  • Author
    Posts
  • #12639
    Syed Muhammad
    Moderator

    بھارت میں کسانوں نے عزم ظاہر کیاہے کہ جب تک متنازعہ زرعی قوانین کو کالعدم نہیں قراردیاجاتا مودی کی فسطائی حکومت کے خلاف ان کا احتجاج جاری رہے گا ۔

    کسانوں کی تنظیم بھارت کسان یونین کے رہنما راکیش TAKAIT نے کہا ہے کہ وہ جب تک متنازعہ زرعی قوانین پرمعاہدے طے نہیں پا جاتا وہ اپنے گھروں کو واپس نہیں جائیںگے۔

    دریں اثناء الجزیرہ نے رپورٹ دی ہے کہ بھارتی ادیب APOORVANAND نے ایک مضمون میں کہا ہے کہ حکمران جماعت بی جے پی کسانوں کے احتجاج کو سکھوں کی ایک سازش کے طورپر پیش کرکے کسانوں کو بدنام کرنے کیلئے اکثریتی آمرانہ ہتھکنڈے استعمال کررہی ہے ۔

    انہوں نے کہا کہ ایک طرف دارالحکومت نئی دلی میں رکاوٹیں ہی رکاوٹیں ، شاہراہوں پرمستقل دیواریں ، خندقیں، خاردار تاریں اورسڑکوں پرکیل کانٹے لگا دئیے گئے ہیں تو دوسری طرف اس کی ہریانہ ، اترپردیش اورپنجاب سے ملنے والی سرحدوں پر بھاری تعداد میں پولیس اور پیراملٹری فورس کے اہلکار تعینات کیے جارہے ہیں ۔

    دسمبر کے پہلے ہفتے سے لاکھوں کسانوں نے نئی دلی میں احتجاج دھرنا دے رکھا ہے۔

Viewing 1 post (of 1 total)
  • You must be logged in to reply to this topic.

Comments are closed, but trackbacks and pingbacks are open.