Jirga South Asia

  • This topic has 0 replies, 1 voice, and was last updated 1 week, 5 days ago by Shaista Khan.
Viewing 1 post (of 1 total)

  • Author
    Posts
  • #10051
    Shaista Khan
    Participant

    آسام میں ہندو لڑکیوں کی مسلمان لڑکوں سے شادیوں کے رجحان کو روکا جائے گا، ہیمنت بسما شرما

    نئی دہلی: بھارتی ریاست آسام میں بی جے پی کی حکومت نے ہندو لڑکیوں کی مسلمانوں سے شادیوں کیخلاف کارروائی کا اعلان کیا ہے۔

    بی جے پی کی حکومت ہندو لڑکیوں کی مسلمان لڑکوں سے شادیوں کے بڑھتے رجحان پر سٹپٹا گئی اور اسے لو جہاد کا نام دے کر روکنے کا اعلان کردیا۔

    بھارتی میڈیا کے مطابق ریاستی وزیر خزانہ و صحت ہیمنت بسما شرما نے کہا کہ آسام میں ہندو لڑکیوں کی مسلمان لڑکوں سے شادیوں کا رجحان بڑھ رہا ہے، جسے روکا جائے گا۔

    ہیمنت نے کہا کہ مسلمان لڑکے فیس بک پر ہندو لڑکیوں سے دوستیاں کرتے ہیں اور پھر یہ دوستیاں شادیوں میں بدل جاتی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ہم اپنی بہنوں اور بیٹیوں کو مسلمان لڑکوں سے بچانے کے لیے ایسی شادیوں کے خلاف لڑیں گے۔

    This article originally appeared on Express News

Viewing 1 post (of 1 total)
  • You must be logged in to reply to this topic.