Viewing 1 post (of 1 total)

  • Author
    Posts
  • #18547
    admin
    Keymaster

    دنیا کی اب تک کی سب سے بڑی خلائی دوربین کچھ ہی گھنٹوں میں مدار میں جانے والی ہے۔
    جیمز ویب سپیس ٹیلی سکوپ کو آریان فائیو راکٹ کے ذریعے فرینچ گیانا سے زمین سے 15 لاکھ کلومیٹر دور خلا میں چھوڑا جائے گا۔
    اس منصوبے کو پایہ تکمیل تک پہنچنے میں 30 برس کا عرصہ لگا ہے اور اسے 21 ویں صدی کے سب سے بڑے سائنسی منصوبوں میں سے ایک قرار دیا جا رہا ہے۔
    سائنسدانوں کو امید ہے کہ جیمز ویب ٹیلی سکوپ خلا میں ان ستاروں کو ڈھونڈ پائے گی جو ساڑھے 13 ارب سال پہلے کائنات میں سب سے پہلے روشن ہوئے۔
    یہ دیو ہیکل خلائی دوربین کائنات کے ان حصوں کی دیکھنے کی کوشش بھی کرے گی جہاں تک ہبل ٹیلی سکوپ کی نظر بھی نہیں پہنچ سکی ہے۔
    اس ٹیلی سکوپ میں یہ صلاحیت بھی موجود ہے کہ یہ زمین سے کہیں دور موجود سیاروں کے ماحول اور وہاں موجود گیسوں کی جانچ کے ذریعے زندگی کے شواہد تلاش کر سکے گی۔
    اس ٹیلی سکوپ کی لانچ یورپین خلائی خلائی ادارے کے زیرِ انتظام کورو سپیس پورٹ سے پاکستانی وقت کے مطابق پانچ بج کر 20 منٹ پر ہو گی۔
    اس حوالے سے جوش اور ولولہ عروج پر ہے لیکن ساتھ ہی ساتھ گھبراہٹ بھی زیادہ ہے۔
    خلا تک پہنچنے کے لیے جیمز ویب کو پہلے ایک 27 منٹ طویل اڑان سہنی ہو گی جو ایک کنٹرولڈ دھماکے جیسی ہو گی۔

    More on this story from BBC Urdu

Viewing 1 post (of 1 total)
  • You must be logged in to reply to this topic.