Viewing 1 post (of 1 total)

  • Author
    Posts
  • #7760
    admin
    Keymaster

    معروف ٹی وی کمپیئر طارق عزیز نے” دیکھتی  آنکھوں  اور سنتے  کانوں”  کو الودع کہہ دیا۔ادب، شاعری، تہذیب  اور تاریخ کا  ایک  اور  باب  بند ہوگیا ۔

    ” دیکھتی  آنکھوں  اور سنتے  کانوں  کو  طارق عزیز کا سلام  کہنے والے  میزبان نے پاکستان ٹیلی وژن (پی ٹی وی) کے پروگرام نیلام گھر سے شہرت پائی، انہوں نے کئی سال تک اس پروگرام کی میزبانی کی۔

     بارعب  اور جاندار  آواز کے مالک طارق عزیز  پاکستان کے پہلے نیوز کاسٹر تھے، انہوں نے کئی فلموں میں اداکاری کے جوہر دکھائے۔میزبان طارق عزیز رکن قومی اسمبلی بھی رہے، وہ 1997 میں رکن قومی اسمبلی منتخب ہوئے تھے۔

    طارق عزیز 28 اپریل 1936 کو جالندھرمیں پیدا ہوئے، انہوں نے ریڈیو پاکستان لاہور سے اپنی پیشہ ورانہ زندگی کا آغاز کیا اور 40 سال تک پروگرام نیلام گھر کی میزبانی کی۔

    ان کی پہلی فلم ’انسانیت‘ 1967 میں ریلیز ہوئی اور انہوں نے سالگرہ، قسم اس وقت کی، کٹاری، چراغ کہاں روشنی کہاں، ہار گیا انسان میں بھی اداکاری کے جوہر دکھائے۔

    معروف اداکار و میزبان طارق عزیز نےاردو اور پنجابی میں شاعری بھی کی۔ طارق عزیز کی خدمات کے اعتراف میں انہیں 1992 میں تمغہ حسن کارکردگی سے بھی نوازا گیا۔

    طارق عزیز کو یہ اعزاز بھی حاصل ہے کہ انہوں نے پی ٹی وی کی پہلی اناؤنسمنٹ کی اور کریئر پہلے سے آخری دن تک پی ٹی وی کے ساتھ وابستہ رہے۔ ان کی وفات پر شوبز انڈسٹری سے وابستہ فنکاروں نے افسوس کا اظہار کیا اور ان کی وفات کو قومی نقصان قرار دیا ہے۔

    دوسری جانب وزیراعظم عمران خان نے طارق عزیز کی موت پر دکھ اور افسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ ان کے اہل خانہ سے تعزیت کرتا ہوں اور ان کے لیے دعا گو ہوں۔

    آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ  نے بھی لیجنڈری براڈکاسٹر اور منفرد آرٹسٹ طارق عزیز کے انتقال پر افسوس کا اظہار کیا ہے۔

    انہوں نے کہا کہ پاکستان کے لئے ان کی خدمات کو ہمیشہ یاد رکھا جائے گا۔ اللہ پاک مرحوم کی روح کو ابدی سکون عطا کرے اور سوگوار خاندان کو صبر جمیل عطا کرے ، آمین۔

Viewing 1 post (of 1 total)
  • You must be logged in to reply to this topic.