Jirga Pakistan

  • This topic is empty.
Viewing 1 post (of 1 total)

  • Author
    Posts
  • #10709
    Shaista Khan
    Participant

    اسلام آباد: ملک بھر میں وبا کی دوسری لہر کے پیش نظر ہر روز کیسز میں اضافہ ہونے لگا، جس کے باعث لاک ڈاون کے حوالے سے بھی قیاس آرائیاں کی جا رہی ہیں ۔ اس حوالے سے وزیراعظم عمران خان کے معاون خصوصی برائے صحت ڈاکٹر فیصل سلطان نے کہا پیر کے دن نیشنل کنڑول اینڈ کمانڈ سینٹر کے اجلاس میں لاک ڈاون اور تعلیمی اداروں کی بندش کے بارے میں حتمی میں فیصلہ کیا جائے گا۔ 

    میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ اسمارٹ لاک ڈاون کے معاملے پر پیر کو نیشنل کنڑول اینڈ کمانڈ سینٹر کے اجلاس کے فوری بعد ایک اہم ترین مشاورتی اجلاس منعقد کیا جائے گا جس میں وزارت صحت اور تعلیم کے اعلیٰ حکام بھی شرکت کریں گے۔ مشاورت کے بعد ہی فیصلے کئے جائیں گے۔ 

    یہ بھی پڑھیں:پاکستان بھر میں راتوں رات کرونا نے تباہی مچا دی ساڑھے 3ماہ بعد ایک ہی دن میں ریکارڈ اموات

    ڈاکٹر فیصل سلطان نے مزید کہ اس وقت ہمارا ہیلتھ کیئر سسٹم پہلے سے زیادہ بہتر ہو گیا ہے اور ہیلتھ الاونس کے بارے میں ڈاکٹروں کے تحفظات بھی دور کئے جائیں گے۔ رسک الاونس کے حوالے سے ڈاکٹرز کے تحفظات جائز ہیں۔ وبا کے لئے مختص وارڈٖ میں کام کرنے والے تمام ڈاکٹرز کو رسک الاونس دیا جائے گا۔ اگر غلطی سے بھی کسی شخص کو یہ الاونس چلا گیا جو اسکا اہل نہیں تھا تو واپس لے لیا جائے گا۔ 

    اس سے قبل وفاقی وزیر تعلیم شفقت محمود نے بھی کہا کہ جن تعلیمی اداروں میں وبا کے کیسز رپورٹ ہوں گے ان کو بند کر دیا جائے گا۔ ابھی کوئی ایسی صورت حال نہیں ہے کہ حکومت تعلیمی اداروں کو مکمل طور پر بند کر دے۔ اگر اس طرح کیا گیا تو بچوں کو تعلیم کا حرج ہو گا۔ 

    یہ بھی پڑھیں:لندن سے گرفتاری کاڈر، نوازشریف سعودی عرب میں پناہ لینے کے لیے کوشاں

    واضح رہے کہ ملک بھر میں وبا کی دوسری لہر کی شدت میں اضافہ ہوتا جا رہا ہے اور گزشتہ 24 گھٹنوں کے دوران مزید 37 افراد اپنی جان کی بازی ہار چکے ہیں اور مجموعی طور پر تعداد سات ہزار سے زائد ہو گئی ہے۔ 

    This article originally appeared on Neo News

Viewing 1 post (of 1 total)
  • You must be logged in to reply to this topic.

Comments are closed, but trackbacks and pingbacks are open.