• This topic is empty.
Viewing 1 post (of 1 total)

  • Author
    Posts
  • #12156
    Farhan Khan
    Participant

    واشنگٹن: چار سال تک امریکا کی خاتون اول رہنے والی میلانیا ٹرمپ اپنے شوہر ڈونلڈ ٹرمپ کی اقتدار سے رخصتی سے 48 گھنٹے قبل امریکی قوم کو محبتوں بھرا نیک تمناؤں پرمبنی الوداعی پیغام بھیجا ہے۔

    میڈیارپورٹس کے مطابق وائٹ ہاؤس  سے رخصت ہونے سے قبل اس کے آخری دن خاتون اول میلانیا ٹرمپ نے ایک تقریر کی جس میں انہوں نے اپنے شوہر کی 4 سالہ دور صدارت کےدوران وائٹ ہاؤس  کی ترقی کے لیے کوششوں کا جائزہ پیش کیا۔

    اس خطاب میں سات منٹ الوداعی پیغام پر مشتمل تھے جس میں انہوں نے امریکیوں پر زور دیا کہ وہ تشدد اور نفرت سے زیادہ محبت کا اصول اپنائیں۔

    وائٹ ہاؤس  کی سرکاری ویب سائٹ پر شائع ہونے والے اپنے تازہ پیغام میں میلانیا نے کہا کہ پچھلے چار سالوں میں میرے خاندان کو یہ اعزاز حاصل ہوا ہے کہ وائٹ ہاؤس  عوام کا گھر ہے۔ ہمارے گھر کو عوام کے گھر کا اعزاز حاصل ہوا۔ ہم اپنے اور قوم کے اس گھر میں پوری ٹیم کا ہم خیر مقدم کرتے ہیں۔ یہ عوام کی خدمت کا گھر ہے۔ یہ ایک ایسی عمارت ہے جو زندہ میراث تشکیل دیتی ہے اور جو ہماری قومی زندگی کا علامتی مرکز ہے۔

    میلانیا نے اپنے شوہر کے دور صدارت میں حاصل ہونے والی کامیابیوں پر روشنی ڈالی اور کہا کہ اگرچہ کرونا کی وبا نے معیشت سمیت تمام شعبوں کو متاثر کیا۔ تاہم دوایسے منصوبے مکمل کیے ہیں جن کا وائٹ ہاؤس  میں طویل عرصے سے منصوبہ بنایا جا رہا تھا۔ پہلااسٹیٹ آف دی آرٹ منصوبہ فلور فریم آرٹ کا تھا جسے ایک ایشیائی آرٹیسٹ اسامووا نوگوچی نے تیا کیا اس کی تنصیب تھی جو گذشتہ برس نومبر میں کی گئی۔

    میلانیا نے مزید کہا کہ میں ان بہادر جوان فوجیوں کے چہروں کو دیکھتی ہوں جو فخر کے ساتھ مجھے اپنی نگاہوں میں بتاتے ہیں کہ وہ اس ملک کی خدمت کرنا کس قدر پسند کرتے ہیں۔ میں خدمت میں ہر شخص اور ہمارے حیرت انگیز فوجی گھرانے سے کہتی ہوں کہ آپ ہمارے ہیرو ہیں۔ آپ ہمیشہ میرے خیالات اور دعاں میں رہیں گے۔

    میلانیا ٹرمپ نے مزید کہا کہ بطور خاتون اول اور اس قومی خزانے کی عارضی نگران کی حیثیت سے میرے پیشروں کی وہائٹ ہاؤس  کے لیے عقیدت اور تاریخ سے ان کی محبت جس نے انہیں اس عمارت کا تحفظ فراہم کیا ،اسی طرح میں نے پچھلے چار سالوں میں جن منصوبوں کی نگرانی کی ہے وہ یہ ہیں کہ لوگ جن کا مجھے یقین ہے کہ وہ نہ صرف گھر کے ورثے کا تحفظ کریں گے بلکہ آئندہ نسلوں کے لیے اس کی خوبصورتی اور وقار میں بھی اضافہ کریں گے۔

    انہوں نے کہا کہ شروعات 2018 میں ہوئی تھی جب کوئینز حمام کی پہلی مکمل تزئین و آرائش 1950 کی دہائی میں شروع ہوئی۔ اسی سال ایوان میں صدر لفٹکا مکمل کیا۔ پھر 2019 میں میں نے مشرقی کمرے کے فرش کی کئی ماہ کی بحالی کا کام شروع کیا جس سے اس تاریخی جگہ کی اصل شان و شوکت کو زندہ کیا۔اس کے ساتھ داخلی راستوں اور راہداری کے سنگ مرمر فرش پر کیے گئے کام کے ساتھ کیا گیا۔

Viewing 1 post (of 1 total)
  • You must be logged in to reply to this topic.

Comments are closed, but trackbacks and pingbacks are open.