Jirga Pakistan

  • This topic has 0 replies, 1 voice, and was last updated 3 months ago by Syed Muhammad.
Viewing 1 post (of 1 total)

  • Author
    Posts
  • #10221
    Syed Muhammad
    Moderator

    لاہور: (ویب ڈیسک) طویل تعطل کے بعد بیرون ممالک بالخصوص سعودی عرب، متحدہ عرب امارات اور بحرین میں پاکستانیوں کے لیے نئی ملازمتوں کے وسیع مواقع بھی دستیاب ہونا شروع ہو گئے ہیں۔

    اردو نیوز کے مطابق ملازمتوں کے مواقع سامنے آنے کے بعد پاکستان کے اوورسیز ایمپلائمنٹ پروموٹرز نے بھی خوشی کا اظہار کیا ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ اس سے ناصرف ان کا رکا ہوا کاروبار بحال ہوا ہے بلکہ پاکستانیوں کو باعزت روزگار اور ملک کو زرمبادلہ میں اضافے کے مواقع ملیں گے۔

    سعودی عرب کی جانب سے جن شعبوں میں افرادی قوت کی ڈیمانڈ کی گئی ہے ان میں میڈیکل کے شعبے میں فارماسسٹ، انیستھیزیا کے ماہرین، فزیو تھراپسٹ، ڈینٹل ٹیکنیشن، جنرل اور فرسٹ ایڈ نرسز شامل ہیں۔

    معذور افراد کی دیکھ بھال اور ان کے زیر استعمال مشینری کے ٹیکنیشنز کے لیے بھی نوکریوں کے مواقع موجود ہیں۔ اس کے علاوہ مختلف شعبہ جات کے لیے الیکٹریشن، اے سی ٹیکنیشن، زرعی ماہرین، جنرل لیبر، مستری، پلمبر، فورمین، ڈرائیورز، خانسامہ اور کئی دیگر کیٹیگریز کے ماہرین شامل ہیں۔

    اسی طرح متحدہ عرب امارات اور بحرین کو مواصلات کے شعبے بالخصوص سڑکوں کی مشینری کے ٹیکنیشنز، فورمین، لیبر، ٹرک ڈرائیورز اور عام مزدور درکار ہیں۔

    پاکستان بیورو آف امیگریشن نے رواں ماہ اکتوبر کے پہلے 20 دنوں میں بیرون ملک ہزاروں نوکریوں کے لیے بھی اجازت نامے جاری کیے ہیں۔ جبکہ صرف گزشتہ پانچ روز میں سعودی عرب اور متحدہ عرب امارات میں 1167 نوکریوں کے لیے اوورسیز ایمپلائمنٹ پروموٹرز کو اجازت نامے جاری کیے ہیں۔

    حالیہ دنوں میں جن ملکوں نے پاکستان سے افرادی قوت طلب کی ہے ان میں سعودی عرب سرفہرست ہے۔ تاہم پاکستان میں سعودی سفارت خانے میں کورونا ایس او پیز کے باعث نئے ورک ویزہ پر تصدیقی مہریں لگانے کا سلسلہ شروع نہیں ہو سکا۔

Viewing 1 post (of 1 total)
  • You must be logged in to reply to this topic.