• This topic is empty.
Viewing 1 post (of 1 total)

  • Author
    Posts
  • #11872
    Farhan Khan
    Participant

    واشنگٹن ڈی سی کی پولیس کا کہنا ہے کہ کیپیٹل ہل ہر صدر ٹرمپ کے حامیوں کی ہنگامہ آرائی کے دوران ہلاک ہونے والے افراد کی تعداد چار ہے۔

    ان میں سے ایک خاتون پولیس کی گولی سے ہلاک ہوئیں جبکہ دیگر تین طبی مسائل کی وجہ سے جان سے گئے۔

    واشنگٹن ڈی سی کی میئر باؤزر اور پولیس چیف رابرٹ کونٹی نے اب سے کچھ دیر قبل ایک پریس کانفرنس کے دوران کیپٹل ہل میں ہونے والی ہنگامہ آرائی کے نتیجے میں ہونے والے نقصان اور مجموعی صورتحال کے حوالے سے بات کی ہے۔

    انھوں نے اس دوران ہونے والی ہلاکتوں کی تفصیلات بتاتے ہوئے کہا کہ جس خاتون کو پولیس کی جانب سے گولی مار کر ہلاک کیا گیا وہ متعدد افراد کے اس گروہ کا حصہ تھیں جنھوں نے اجلاس کے دوران زبردستی عمارت میں گھسنے کی کوشش کی تھی۔

    اس گروہ کو سادہ کپڑوں میں ملبوس افراد نے پکڑنے کی کوشش کی اور اس دوران ایک افسر کو اسلحے کا استعمال کرنا پڑا۔

    اس خاتون کو ہسپتال لے جایا گیا جہاں پہنچنے پر ان کی ہلاکت کی تصدیق ہوئی۔ ان کی شناخت اس وقت تک نہیں بتائی جائے گی جب تک ان کے قریبی رشتہ داروں کو اطلاع نہ دے دی جائے۔

    انھوں نے دیگر اموات کے حوالے سے تفصیلات بتاتے ہوئے کہا کہ ہلاک ہونے والے تین دیگر افراد میں ایک ادھیڑ عمر خاتون اور دو مرد شامل ہیں۔ ان تینوں کی موت مختلف نوعیت کی طبی ایمرجنسیز کے باعث ہوئی۔

    میٹرو پولیس ڈیپارٹمنٹ کے تقریباً 14 افراد اس دوران زخمی بھی ہوئے جن میں سے دو کو ہسپتال داخل کروانا پڑا۔ ان میں سے ایک کو شدید چوٹیں آئیں کیونکہ انھیں گھسیٹ کر مجمعے میں لایا گیا تھا۔

    This article originally appeared on BBC Urdu

Viewing 1 post (of 1 total)
  • You must be logged in to reply to this topic.

Comments are closed, but trackbacks and pingbacks are open.