Jirga Politics

  • This topic is empty.
Viewing 1 post (of 1 total)

  • Author
    Posts
  • #12412
    Zaid
    Moderator

    اسلام آباد: پاکستان تحریک انصاف کے متحرک رہنما اور وفاقی وزیر اسد عمر نے پاکستان ڈیموکریٹک موومنٹ(پی ڈی ایم) پر طنز کرتے ہوئے کہا’‏سنا تھا آج کوئی استعفیٰ آنے والا ہے‘۔

    وفاقی وزیر اسد عمر نے ٹویٹ کیا کہ چلو جو ہم سے مانگے تھے اور جو کبھی ملنے نہیں تھے وہ چھوڑو،،،وہ جو مرتضیٰ عباسی وغیرہ کے منہ پر مارنے تھے وہ کہاں گئے؟؟؟کہیں اپنے ہی منہ پر تو نہیں مار لیے۔

    خیال رہےکہ پاکستان ڈیموکریٹک مومنٹ (پی ڈی ایم) کے سربراہ مولانا فضل الرحمان نے حکومت کو الٹی میٹم دیا تھا کہ31 جنوری تک مستعفی ہو جائے ورنہ یکم فروری کو اپوزیشن مستعفی ہوجائے گی اور لانگ مارچ کی تاریخ کا اعلان کیا جائے گا۔

    حکومتی رہنماؤں نے کہا تھا کہ پی ڈی ایم استعفوں کے لیے 31 جنوری کا انتظار کیوں کررہی ہے؟

    گزشتہ روزپاکستان ڈیموکریٹک مومنٹ (پی ڈی ایم) کے سربراہ مولانا فضل الرحمان نے اسمبلیوں سے استعفے نہ دینے کی وجہ بتائی تھی۔

    میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا سیاسی سوچ تھی کہ استعفوں کے بعد سندھ اسمبلی تحلیل ہو گی تو سینیٹ الیکشن نہیں ہوں گے۔ آئینی ماہرین نے متفقہ رائے دی کہ سندھ اسمبلی ختم ہوئی تب بھی الیکٹورل کالج نہیں ٹوٹے گا۔

    اپنی بات جاری رکھتے ہوئے فضل الرحمان کا کہنا تھا کہ تحریک انصاف سینیٹ پر قبضہ کرلے گی، اس لیے حکمت عملی فوری تبدیل کرنا پڑی، تمام جماعتوں کی متفقہ رائے ہے کہ ضمنی الیکشن اور سینیٹ انتخابات میں بھرپور حصہ لیا جائے۔

     This article originally appeared on Hum News

Viewing 1 post (of 1 total)
  • You must be logged in to reply to this topic.

Comments are closed, but trackbacks and pingbacks are open.