وسوسے قطار اندر قطار آتے ہیں ہارون الرشید   ہم سب پہ اللہ رحم کرے۔ یکسوئی سے ہم محروم ہیں۔ وسوسے قطار اندر قطار آتے ہیں اور آتے ہی چلے جاتے ہیں، سبب معلوم۔ حاجی نیامت کا قصّہ بارِ دگر۔ ایک انتخابی مہم کے دوران ان سے ملاقات ہوئی اورContinue Reading

جنابِ شفقت محمود آ پ کا کارنامہ کیا ہے؟ ہارون الرشید   کوئی بھی پھل پھول سکتاہے مگر متکبر نہیں۔ بالاخر وہ گر پڑتا ہے۔ جنابِ شفقت محمود آ پ کا کارنامہ کیا ہے؟ وفاقی وزیرِ تعلیم نے ارشاد کیا کہ اپوزیشن سے حکومت کو کوئی خطرہ نہیں۔ ٹھیک کہا،Continue Reading

کاشتکار ہارون الرشید   کاشتکار حکومت کی ترجیحات میں کہیں موجود نہیں۔ پیہم وہ برباد ہے اور زبانِ حال سے پکارتاہے۔ کچھ اپنے دل کی خبر رکھ کہ اس خرابے میں پڑا ہوں میں بھی کسی گنجِ گمشدہ کی طرح رنگارنگی اور بو قلمونی شاید اس کائنات کی سب سےContinue Reading

تحفظ ہارون الرشید   غور و فکر کی فرصت ہی نہیں۔ انہماک، جس کے بغیر راہ متعین ہو سکتی ہے، ذاتی زندگی سنور سکتی ہے نہ اجتماعی۔ ہیولا برق خرمن کا ہے خونِ گرم دہقاں کا مری تعمیر میں مضمر ہے اک صورت خرابی کی تحفظ خوراک کی ایک وفاقیContinue Reading

ستارہء سحری ہم کلام کب سے ہے ہارون الرشید   اللہ کا وعدہ یہ ہے کہ خلوص اور حکمت کبھی پسپا نہیں ہوتے۔ پھر یہ کہ راہِ محبت میں پہلا قدم ہی شہادت کا قدم ہوتاہے۔ کہاں گئے شب فرقت کے جاگنے والے ستارہء سحری ہم کلام کب سے ہےContinue Reading

قصور میرا ہے یا کہ تیرا ہارون الرشید   سرخرو وہی ہوتے ہیں، عزم و ہمت کے علاوہ جو تدبر سے آشنا ہوں، ریاضت کر سکیں، خوئے انتقام سے اوپر اٹھ سکیں۔ عصرِ رواں کے تقاضوں کا ادراک رکھتے ہوں۔ اقبال کی نظم کا عنوان ہے زمانہ اور اس کاContinue Reading